تازہ ترینعلاقائی

ڈیرہ مراد جمالی: ٹیچرز تین ماہ سے تنخواہوں سے محروم گھروں میں فاقہ کشی

ڈیرہ مراد جمالی (نامہ نگار ) نصیرآباد میں عالمی ادارہ یونیسف کے ایجوکیشن پروجیکٹ اے ایل پی سی میں کام کرنے والے ساٹھ ٹیچرز تین ماہ سے تنخواہوں سے محروم گھروں میں فاقہ کشی عیدالضحیٰ کے موقع پر اہل خانہ معصوم بچے نئے جوتے کپڑوں سے محروم عید کی خوشیاں ماند پڑ گئیں عید سے قبل تنخواہیں ادا نہ کی گئیں تو عید کے اے ایل پی سی سینٹروں کو تالے لگا دینگے تفصیلات کے مطابق نصیرآباد میں ناخواندگی کے خاتمے کیلئے عالمی ادارہ یونیسف کے ایجوکیشن پروجیکٹ اے ایل پی سی کے تحت منجھو شوری ڈیرہ مراد جمالی تمبو بابا کوٹ چھتر نوتال روپا ڈپ سمیت دیگر علاقوں میں ساٹھ سے زائد صبح وشام کے اوقات کار میں اے ایل پی سی سینٹرز قائم کیئے گئے جب میں تین ہزار سے زائد بچے بچیاں زیر تعلیم ہیں لیکن سینٹروں میں کام کرنے والے ساٹھ ٹیچروں کو تین ماہ سے تنخواہوں کی ادائیگی نہ ہونے کی وجہ سے گھروں میں فاقہ کشی مناظر ہو چکے ہیں دکانداروں رشتہ داروں نے بھی قرض دینا بند کردیا ہے تعلیمی اداروں میں پڑنے والے بچوں کی ماہانہ فیسوں کی عدم ادائیگی کی وجہ سے سکولوں سے بھی بچوں کو فارغ کیا گیا ہے اور عیدالضحیٰ کے موقع پر اہل خانہ معصوم بچے نئے جوتے کپڑوں بھی خریدے نہیں گئے ہیں جس کی وجہ سے عید کی خوشیاں ماند پڑ گئیں عید سے قبل تنخواہیں ادا نہ کی گئیں تو عید کے بعدا ے ایل پی سی سینٹروں کو تالے لگا دیں دینگے انہوں نے الزام عائد کیا کہ آفیسران اپنے ذاتی خرچے اور گاڑیوں کی ضروریات پورا کر رہے ہیں لیکن ٹیچرز کو تنخواہوں کی ادائیگی نہ کرنا سمجھ سے بالاتر اقدام ہے عالمی ادارہ یونیسف فوری طور پر نوٹس لے اور ٹیچرز کی دائیگی کو یقینی بنایا جائے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button