تازہ ترینعلاقائی

جہلم شہر کے گلی محلے بارشوں کے بعد تالاب کا منظر پیش کرنے لگے

جہلم(نامہ نگار)جہلم شہر کے گلی محلے بارشوں کے بعد تالاب کا منظر پیش کرنے لگے ۔ تحصیل میونسپل ایڈمنسٹریشن جہلم ذمہ داریاں نبھانے سے قاصر، جگہ جگہ نالے، نالیاں بند ،پانی کی نکاسی نہ ہونے کی وجہ سے جی ٹی روڈ سمیت جہلم شہر کی اندرونی سڑکیں اور گلیاں ندی ،نالوں کا منظر پیش کر تی رہیں ، شہریوں کا ڈی سی او جہلم سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز ہونے والی موسلا دھار بارش کیوجہ سے جہلم شہر مسائل کی آماجگاہ میں تبدیل ہو گیا۔ اندرون شہر کی تمام سڑکیں کھنڈرات کا نمونہ پیش کر نے لگیں۔ بارشی پانی کھڑا ہونے کے باعث جگہ جگہ سڑکوں پر گہرے گڑھے پڑگئے ،نالے بند ہونے کیوجہ سے گندا پانی شہر کی سڑکوں پر کئی کئی فٹ جمع ہو گیا۔ جس کی وجہ سے گزرنے والے مسافروں کے علاوہ موٹر سائیکل سواروں اور چھوٹی گاڑیوں کے مالکان کو کافی دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔ بلدیہ اہلکار سول لائن روڈ کی صفائی، ستھرائی میں لگی رہتی ہے جبکہ شہر کے باقی علاقے بلدیہ جہلم کی عدم دلچسپی اور نااہلی کیوجہ سے جوہڑ کا منظر پیش کر رہے ہوتے ہیں اوران علاقوں کی دکانوں کے سامنے کھڑے پانی سے تاجروں کا کارروبار متاثر ہو رہا ہے،جادہ تا ڈسٹرکٹ ہسپتال ، محمدی چوک تا کچہری چوک، محمدی چوک تا کالا گیٹ تک تمام سڑکیں نکاسی آب کا نظام نہ ہونے کی وجہ سے کھنڈرات کا منظر پیش کر رہی ہیں، جادہ چوک اڈہ کے سامنے فلِتھ ڈپو بن چکا ہے اور اندرونی سڑکیں نالے کی شکل اختیار کر چکی ہیں جو کہ مسافروں اور شہریوں کے لئے عذاب سے کم نہیں وہاں سے پیدل چلنا بھی محال ہے کیونکہ اتنی بدبو ہوتی ہے کہ جو بھی گذرتا ہے تو اسکی طبیعت گلِ گل زار ہو جاتی ہے، اخباروں میں کئی مرتبہ اس صورت حال کے بارے بیان کیا جا چکا ہے لیکن انتظامیہ کے کان پر جوں تک نہیں رینگتی۔ شہر کی اندرونی سڑکوں پر پڑنے والے گڑھوں8 میں مٹی اور پتھر ڈال کر بھر دیتے ہیں اور اعلیٰ حکام کی آنکھوں میں دھول جھونک کر ڈنگ ٹپاؤ پالیسی پر عمل پیرا ہیں اندرونِ شہر اور مضافاتی علاقوں میں نالیاں بند ہیں اور ان میں پانی جمع رہتا ہے یہ کتنی بیماریاں پھیلانے کا باعث بن رہا ہے ۔شہریوں کا کہنا ہے کہ ٹی ایم اے کی غفلت اور بے حسی کے سبب شہر فلتھ ڈپو میں تبدیل ہو گیا ہے اور جا بجا گند گی کے ڈھیروں اور ابلتے گٹروں کے باعث پھیلنے والا تعفن وبال جان بن گیا۔ جہلم شہر کی عوامی، سماجی رفاعی حلقوں کا کہنا ہے کہ عملہ صفائی اپنے فرائض کی سر انجام دہی کے بجائے گھر بیٹھ کر تنخواہیں بٹور رہا ہے متعلقہ حکام کا رروائی کے بجائے لا تعلق ہو گئے۔ٹی ایم اے کے افسران کام چور سینٹری ورکروں کے خلاف عوامی شکایات کے باوجود کوئی کارروائی کرنے کو تیار نہیں ہیں۔ بارشوں کے بعد جوہڑوں پر پلنے والے مچھر وں نے شہریوں کی نیندیں حرام کرڈالیں۔ ڈینگی اور دیگر موذی امراض پھیلنے کا خدشہ شدت اختیار کرگیا۔ جہلم کے باسیوں نے ڈی سی او جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر میں صفائی کی صورتحال بہتر بنانے کے لئے فوری احکامات جا ری کریں۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button