تازہ ترینعلاقائی

پشین:صحافیوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں اورتحفظ نہ ملنے کیخلاف کونسل آف آل بلوچستان پریس کلبز نے صوبہ بھر احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا

پشین (بیوروچیف)صحافیوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں اورتحفظ نہ ملنے کیخلاف کونسل آف آل بلوچستان پریس کلبز نے صوبہ بھر احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا 15اگست کو پشین 17اگست کو صوبہ بھر میں احتجاجی مظاہرے ہونگے جبکہ 19اگست کو کوئٹہ پریس کلب کے سامنے علامتی بھوک ہڑتالی کیمپ لگایا جائیگا صوبہ بھر کے صحافیوں کو حق لکھنے پر ہراساں وزدوکوب کرنے اور صحافیوں کو قتل کی دھمکیاں دینے سمیت انہیں موت کے گھاٹ اتارنا روز کا معمول بن چکا ہے صوبائی حکومت عوام دشمن اور کرپٹ عناصر کی پشت پناہی کرنا چھوڑدیں ایکسین بی اینڈ آر فاروق ترین کا پشین کے صحافیوں کے گھروں پر لشکر کشی اور انہیں سنگین نتائج کی دھمکیوں کا حکومت نوٹس لیں ان خیالات کا اظہار صوبائی چیئرمین کونسل آف آل بلوچستان پریس کلبز ملک سعد اللہ جان ترین نے ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ صوبہ بھر کے صحافی متحد ہیں صحافیوں کو دھمکیاں دینے روز کا معمول ہے کوئی ماہی کا لال اب تک پیدا نہیں ہوا کہ وہ صحافیوں کے آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر دھمکی دے سکیں یہ وقت ہی ثابت کریگا کہ قلم میں طاقت ہے یا بندوق میں انہوں نے کہا کہ جو گرجتے ہیں و ہ برستے نہیں یہ ایکسین بی اینڈ آر فاروق ترین کی بھول ہے کہ وہ صحافیوں کو بندوق دیکھا کر مسلح افراد کی مدد سے صحافیوں کے گھروں پر لشکرکشی کرتے ہوئے صحافیوں کو حق لکھنے پر انکے حق کی آواز کو بلند کرنے سے روکیں ہم انہیں بتانا چاہتے ہیں کہ محکمہ بی اینڈ آر پشین میں کرپشن اور لوٹمار کی نشاندہی پر اگر صحافیوں کو آپ موت کے گھاٹ اتارنا چاہتے ہو تو پشین کے صحافی بھی ارشاد مستوئی کی طرح خوش نصیب ہوکر جام شہادت نوش کریں گے حق کی بات ہر حال میں کرینگے سرکاری محکموں میں کرپشن اور لوٹمار کی نشاندہی ہمارا شیوہ ہے کسی کے ڈرانے دھمکانے میں نہیں آئینگے انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت ایکسین بی اینڈ آر فاروق سمیت صحافی دشمن قوتوں کی پشت پناہی کرنا چھوڑ دیں عوامی خدمات پر ترجیح دیں صوبہ بلوچستان کی مٹی نے بہت سے نڈر صحافیوں کو کھویا ہے صحافیوں نے جانیں دی ہے لیکن حق کی آواز کو ہر مشکل وقت میں بلند کیا ہے انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ایکسین فاروق کی معطلی اور انکی تبادلے سمیت اسلحے سے لیس مسلح افراد سمیت صحافیوں کے گھروں پر لشکر کشی کی فوری آزادانہ تحقیقات کرائیں ورنہ سخت سے سخت احتجاج کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں  پشین،بلوچستان میں گورنرراج کی نفاذ کیخلاف احتجاجی ریلی نکالی، ہزاروں افراد کی شرکت

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker