تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:کینٹ بورڈ واہ کینٹ کا علاقہ منیر آبادمسائل کی آماجگاہ بن گیا، نہ پینے کا صاف پانی اور نہ نکاسی آب

ٹیکسلا(ڈاکٹر سید صابر علی / نامہ نگار)کینٹ بورڈ واہ کینٹ کا علاقہ منیر آبادمسائل کی آماجگاہ بن گیا،نہ پینے کا صاف پانی اور نہ نکاسی آب کا بندوبست ،جگہ جگہ گندگی کے ڈھیروں سے علاقہ میں تعفن پھیلنے کا خدشہ،لوگ سیوریج ملا پانی پینے پر مجبور، متعدد کنویں میں سیورج کا پانی سرائیت کر گیا، مکین مہلق بیماریوں میں مبتلا ہونے لگے،بھاری ٹیکسوں کی ادائیگی کے باوجود کینٹ بورڈ مکینوں کے مسائل پر کوئی توجہ نہیں دے رہا،مکین اپنی مدد آپ کے تحت کام کر رہے ہیں،علاقہ میں نصب ٹیوب ویل عرصہ دراز سے بند پڑے ہیں ، ناقص ایڈ منسٹریشن کے باعث واٹر سپلائی عرصہ دراز سے معطل ہے،کینٹ بورڈ کے الیکشن ہونے کے بعد بھی عوام مسائل کی چکی میں پس رہے ہیں عوامی نمائندے مسائل حل کرنے میں مکمل طورپر ناکام ہیں ، نکاسی آب نے لوگوں کی کروڑوں روپے کی جائیدادوں کو نقصان سے دوچار کردیا،منیر آباد صابری گلی کے مکینوں نے سروے کے دوران میڈیا کی توجہ اس جانب راغب کی کہ یہاں عرصہ دراز سے مکین مسائل سے دوچار ہیں ، گزشتہ کئی دنوں سے گلی میں سیوریج کا پانی پھیلا ہوا ہے جس سے راگیروں کو گزرنے میں نہ صرف مشکلات کا سامنا ہے بلکہ ناپاک پانی نمازیوں کے کپڑے بھی ناپاک کردیتا ہے ،گلی میں سیوریج کے پانی کے باعث بدبو اور تعفن پھیل رہا ہے گندا پانی لوگوں کے گھروں میں داخل ہورہا ہے نالا عرصہ دراز سے بند پڑا ہے،اب مجبور ہوکر مکینوں نے اپنی مدد آپ کے تحت پیسے اکھٹے کر کے سیوریج کے لئے تین سو پندرہ فٹ نالہ کھدوایا ہے جس پر ایک لاکھ پچیس ہزار خرچ آیا جو ہم نے مل باٹ کے جمع کیا،صابری گلی کے مکینوں متین احمد،اکثر اعوان،ناصر ہاشمی،انعام اللہ ،محمد توصیف الرحمان،محمد رفیق،ملک شیراز ،قاسم خان،سید اظہر حسین،فتح محمد،حاجی فاضل،محمد رضوان،و دیگر کا کہنا تھا کہ کینٹ بورڈ ہم سے بھاری ٹیکس تو وصول کرتا ہے مگر مسائل کے حل پر کوئی توجہ نہیں دی جاتی، حتیٰ کہ ہمیں پینے کا پانی بھی میسر ہے نہیں،لوگ پانی کے ٹینکروں سے خرید کر پانی پینے کا بندوبست کرتے ہیں ، جبکہ یہاں واٹر سپلائی موجود ہے جس کی تمام لائین بھی بچھی ہوئی ہیں مگر عدم ادائیگی کے باعث واتر سپلائی عرصہ دراز سے معطل ہے ،ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی مسائل سے دوچار ہے مگر کینٹ بورڈ اور یہاں سے منتخب نمائندے خواب خر گوش کے مزے لوٹ رہے ہیں ،انھیں عوامی مسائل کا کوئی ادراک نہیں،دوسری طرف کینٹ بورڈ پیدائش سے لیکر اموات تک کے سرٹیفیکٹ لینے کے لئے بھاری ٹیکس وصول کرتا ہے مکان بنانے کے لئے کینٹ بورڈ بھاری رقم این او سی کی مد میں وصول کرتا ہے، لیکن مسائل کے حل پر کوئی توجہ نہیں دی جاتی ،مکینوں کا کہنا تھا کہ اگر کینٹ بورڈ ہمارے مسائل ھل نہیں کرسکتا تو اس آبادی کو ٹیکسلا بلدیہ میں شامل کیا جائے تاکہ لوگوں کے مسائل تو حل ہوں ، ہمیں کینٹ بورڈ کی حدود میں رہنے کی بھاری سزا دی جارہی ہے،کسی قسم کی کوئی سہولیات مہیا نہیں،ترقیاتی کام بھی پسند نہ پسند کی بنیاد پر کئے جاتے ہیں،انھوں نے وفاقی وزیر چوہدری نثار علی خان ، کینٹ بورڈ کے اعلیٰ حکام اور چئیرمین پی او ایف بورڈ سے اپیل کی ہے مکینوں کو مسائل کے چنگل سے آزاد کیا جائے ، زندگی کی بنیادی سہولیات جو ہمارا بنیادی حق ہے ہمیں دیا جائے ، منیر آباد بالخصوص صابری گلی کے مکینوں سے سوتلی ماں جیسا سلوک ترک کیا جائے ،

یہ بھی پڑھیں  ورلڈ ٹی ٹوینٹی:انگلینڈ نے نیوزی لینڈ کو 6 وکٹ سے شکست دے دی

taxila1

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker