شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / وہاڑی: اختیارات کا غلط استعمال یا جذباتی پن تھانہ صدر میں تعینات اے ایس آئی کی محکمہ پولیس پر برس پڑے

وہاڑی: اختیارات کا غلط استعمال یا جذباتی پن تھانہ صدر میں تعینات اے ایس آئی کی محکمہ پولیس پر برس پڑے

وہاڑی(بیورورپورٹ)اختیارات کا غلط استعمال یا جذباتی پن تھانہ صدر میں تعینات اے ایس آ ئی کی محکمہ پولیس پر برس پڑے کام نہیں کرنے دیا جارہا رشوت خور افسران کے خلاف بھی آ واز بلند کردی نوکری چھوڑنے کا اعلان میڈیا اور سوشل میڈیا پر اسٹیمپ لگی درخواست وائرل افسران کا اے ایس آ ئی کی محکمہ پولیس کے خلاف تشہیر پر نوٹس فوری تھانہ صدر سے لائن حاضر، اگلے ہی روز اے ایس آ ئی نے بیان بدل لیا سوشل میڈیا پر شائع ہونے والی پوسٹ کو من گھڑت قرار دے دیا تفصیل کے مطابق تھانہ صدر وہاڑی میں چند ماہ پہلے تعینات ہونے والے اے ایس آ ئی لیاقت علی بھٹی نے چند روز قبل صحافیوں کو بذریعہ وٹس اپ اور سوشل میڈیا پر اپنی تحریر کردہ لکھائی میں محکمہ پولیس پر الزامات کی بوچھاڑ کردی اے ایس آ ئی لیاقت بھٹی نے اپنیالزامات میں کہاکہ محکمہ پولیس جو کہ سراسر عبادت اور اللہ و اسکے رسولﷺ کی خوشنودی حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہے مگر بعض افسران اچھی پپوسٹوں پر تعینات ہیں مگر رشوت،زانی،شرابی،چغل خور،منشیات فروشوں،بھتہ خوروں اور جوئے کے اڈوں سے بھتہ لینے والوں میں شمار ہوتا ہے اس پاکیزہ محکمہ کو افسران نے ہائی جیک کیا ہوا ہے جبکہ ایمانداری سے کام کرنے والے عادل،منصف اور بالخصوص سچی کھری بات منہ پر کرنے والوں کی کوئی جگہ نہیں اگر اس ایماندار افسر یا اہلکار کی شنوائی نہ ہو تو مجبوراً راستہ خود کشی اختیار کرنا پڑتا ہے لیاقت علی بھٹی نے کہا کہ میں میری تعلیم بی ایس سی ایل ایل بی اور ایم اے ہے مقابلے کا امتحان پاس کرکے پولیس محکمہ میں بھرتی ہوا تھا کسی فرد واحد کے ساتھ ناانصافی نہیں کی نوکری کو ایمانداری سے نبھایا بھوک پیاس ضرور برداشت کی ضمیر کو نہیں بیچا جو نوکری کرچکا اس پر فخر ہے اب مزید نوکری نہیں کر سکتا لیاقت علی بھٹی نے کہا کہ ریٹائرمنٹ لینا چاہتا ہوں اور یہ میرا حق ہے اگر نہیں دیں گے تو اگلے جہاں اپنا حق اللہ رب العزت کے دربار میں وصول کروں گا آ خر میں لیاقت علی بھٹی نے پولیس زندہ آ باد پاکستان پائندہ باد کا بھی نعرہ لگایا اے ایس آ ئی لیاقت علی بھٹی کے اس بیان پر پولیس افسران نے فوری نوٹس لیتے ہوئے لیاقت بھٹی کو لائن تبدیل کردیا جبکہ اگلے ہی روز پولیس ترجمان کی وساطت سے اے ایس آ ئی لیاقت بھٹی نے محکمہ پولیس پر لگائے گئے الزامات کو مسترد کردیا اورکہا کہ جو درخواست پر سٹیمپ لگی وہ کسی نے میرے دراز سے چوری کی ہے امر قابل ذکر ہے کہ اے ایس آ ئی لیاقت بھٹی نے بعض میڈیا کے ارکان کو بذریعہ واٹس اپ بھی تحریر بھجوائی جس میں الزامات نمایاں تھے جو کہ محفوظ بھی ہے

error: Content is Protected!!