بین الاقوامیتازہ ترین

غزہ :اسرائیل اور حماس کے درمیان 72 گھنٹے کی جنگ بندی

غزہ(ڈیسک نیوز) غزہ میں گزشتہ 24 روز سے جاری اسرائیلی بربریت اور درندگی کے بعد صیہونی فورسز اور حماس کے درمیان 72 گھنٹے کی فائر بندی پر عمل درآمد شروع ہو گیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق غزہ میں 24 روز سے جاری اسرائیلی وحشی درندوں کے ہاتھوں اب تک 1480 افراد شہید جب کہ 7 ہزار کے قریب زخمی ہو چکے ہیں۔ دوسری جانب حماس کی جوابی کارروائیوں میں اب تک 55 کے قریب اسرائیلی فوجی ہلاک ہو چکے ہیں۔ اسرائیل اور حماس کے درمیان 72 گھنٹے کی جنگ بندی کا اعلان امریکی وزیر خارجہ جان کیری اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے کیا جو پاکستان وقت کے مطابق 10 بجے شروع ہوا۔دوسری جانب اسرائیل اور حماس کے اہلککاروں نے بھی اقوام متحدہ کی جانب سے جنگ بندی کی تصدیق کردی ہے جب کہ اس دوران اسرائیلی فوج اپنی جگہوں پر قائم رہیں گی۔ جنگ بندی کے حوالے سے جاری بیان میں فریقین پر زور دیا گیا ہے کہ وہ انسانی بنیادوں پر کی جانے والی جنگ بندی شروع ہونے تک تحمل سے کام لیں اور جنگ بندی کے دوران اپنے وعدوں پر مکمل طور پر قائم رہیں۔ بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ بے گناہ شہریوں کے قتل عام کو روکنے کے لئے جنگ بندی انتہائی ضروری ہے، جنگ بندی کے دوران غزہ کے شہریوں کو انسانی امداد فراہم کی جائے گی اور مردوں کو دفنانے، زخمیوں کی دیکھ بھال کرنے اور خوراک حاصل کرنے جیسے ضروری کام کرنے کا موقع ملے گا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button