تازہ ترینکالممحمد فرحان عباسی

ہمارے انداز ہی نرالے ہیں

farhanہم ایک ایسی قوم ہیں جسے اپنے منہ میاں مٹھو بننے کا بہت ہی زیادہ شوق ہے ،ہم اپنی نرالی اداؤں کو دیکھ کر اپنی تعریفوں کے پل باندھتے رہتے ہیں ،جن اداؤں کے پیچھے ہماری خود غرضی کے علاوہ کچھ بھی نہیں ہوتا،ہم اپنوں کو اپنے ہی ہاتھوں اپنا دشمن بنا لیتے ہیں ،اور جو واقعی ہمارے دشمن ہیں ان کو اپنے آنچل میں جگہ دیتے ہیں ،ہم اس قدر گری ہوئی قوم بن چکے ہیں کہ ہم اپنے فرائض سے بھی لا علم ہو چکے ہیں
نماز ،روزہ ،حج،زکوۃ اپنی جگہ ان کی تو شائد ہی کسی کو پرواہ ہو ،ہم نے تو انسانیت کو بھی بھلا دیا ہے ،
ہر ایک اپنی ہی بازی جیتنے کی تگ و دو میں لگا ہوا ہے اس کے لئے چاہے اسے خون کی ندیاں ہی کیوں نا بہانا پڑیں ،کتنے ہی گلے کیوں نا کاٹنا پڑیں ،کتنے ہی معصوم لوگوں کے منہ سے روٹی کا نوالہ ہی کیوں نا چھیننا پڑے ،ہم آگے بڑھنے کے لئے کچھ بھی کر گزرنے کو تیار ہو جاتے ہیں ،
اور اس کے بدلے میں ہم صرف اپنی ناک اونچی رکھنا چاہتے ہیں ،ہم بحیثیت مسلمان اپنے آپ پر فخر کرتے ہیں اور دنیا کے دوسرے تمام مذاہب کو جھوٹا ثابت کرتے ہیں جو کے ایک سچ ہے ،
مگر ہم صرف برائے نام مسلمان بننا پسند کرتے ہیں ،ہمارے سامنے کوئی بھوکا مر جائے ہم اس کی پرواہ نہیں کرتے ،وہ مرتا ہے تو مرتا رہے مگر ہم اور ہمارے بچے پیٹ بھر کے کھانا کھائیں ،کیونکہ ہمارے انداز نرالے ہیں، ہمارے پڑوس میں کسی غریب کے بچوں کو عید پے پہننے کے لئے ایک جوڑاکپڑوں کا نا مل سکے ،مگر ہمارے بچوں کے پاس عید کے تین دنوں کے کئے تین تین جوڑے ہوں ، اور ہاتھوں میں عیدی کے ہزاروں روپے ہوں ،کیونکہ ہم لوگ انداز ہی نرالے رکھتے ہیں ۔
ہمارے بازاروں میں ایک باپ اپنے بچوں کے سرعام برائے فروخت کی آواز لگاتا ہے مگر ہم اس سے اس کی وجہ پوچھنے سے بھی قاصر ہو جاتے ہیں ،
ہمارے گھروں سے فقیروں کو دھکے دے کر جانوروں کی طرح ہانک دیا جاتا ہے ،اور وہ کچرے کے ڈھیر سے ہمارے گھروں کے بچے کھچے کھانے کھانے پر مجبور ہو جاتے ہیں مگر ہمارے دل پر اس کا بھی کوئی اثر نہیں ہوتا ،کونکہ ہمارے انداز ہی نرالے ہیں ۔
ہمارے ملک میں مذہبی لوگوں کی ایک بہت بڑی تعداد ہے لگ بھگ ۹۰ فیصد ہیں مگر ہمارے ملک میں مذہب ہی کو بدنام کیا جاتا ہے ،مذہب کا لبادہ اوڑھ کر دوسروں کو بیوقوف بنایا جاتا ہے اور پھر اپنی جھوٹی عزت کو بچانے کے لئے کسی کی بھی عزت کی قربانی دے دی جاتی ہے ،کیونکہ ہم عزت دار لوگ ہیں اور ہمارے انداز بھی نرالے ہیں ،اسلام میں جب بھی کسی پے الزام لگا اس پر گواہوں کی طلبی کی گئی ثبوت مانگے گئے ،مگر ہمارے ملک میں ایسے مذہبی لوگ ہین جن کو نا تو گواہوں کی ضرورت پڑتی ہے نا ہی ان کے لئے ثبوت کوئی معنی رکھتے ہیں ان کی جھوٹی انا ،ان کا تکبر ہی ان کے لئے قاضی بن جاتا ہے اور پھر جو بھی اس قاضی کے سامنے جاتا ہے اناکی پھینٹ چڑھ جاتا ہے ،اس کی سزا ان مذہبی لوگوں کی جھوٹی انا کے سائے میں مرتب کی جاتی ہے چاہے اس سزا سے کسی کا مستقبل داؤ پر لگے ،گھر بک جائے ،خاندان ٹوٹ جائے ۔
ہم لوگ مذھب کے نام پر جھوٹ بولتے ہیں ،مذھب کا لبادہ اوڑھ کر دوسرون کو دھوکہ دینے کی کوشش کرتے ہیں ،مذھب کے نام پر سیاست کرتے ہیں ،سود کھاتے ہیں ،حرام کھاتے ہیں دوسروں سے زیادتیاں کرتے ہیں اور پھر کہتے ہیں ہم ایک مہذب قوم ہیں ،کونکہ ہمارے جینے کے انداز جو نرالے ہیں۔
ہم اپنے نبی کی سنت کو سر بازار نیلام کر دیتے ہیں ، نبی کی سنت کا مذاق اڑاتے ہیں ،اور پھر جب میلاد کی بات آتی ہے تو ایک دوسرے پر کفر اور شرک کے فتوے بھی لگا دیتے ہیں ۔
ہم میلاد کی خوشی میں واہیات بھی بکتے ہیں ،ڈھول ،ناچ گانے ،تماشے بھی کرتے ہیں ،راتون تو دیر تک سڑکوں اور گلی محلوں میں نازیبا حرکات بھی کرتے ہیں ،شرکیہ نعرے بھی لگاتے ہیں ،
غیراللہ کے نام کے چڑھاوے بھی چڑھاتے ہیں ،اور پھر ہم کہتے ہیں کہ ہم نبیﷺکے امتی ہیں ان سے عشق کرتے ہیں ، اور نبی ﷺ سے محبت کا یہ ایک نرالاکیونکہ ہم ایک نرالی قوم ہیں اس لئے ہمارے عشق کے انداز بھی نرالے ہیں ،
ہم ہر سال یوم یکجیتی کشمیر مناتے ہیں اور انڈیا کو اپنا سب سے بڑا دشمن تصور کرتے ہیں ،مگر ہمارے گھروں میں چوبیس گھنٹے انڈین فلمیں چلتی ہیں ۔ہم سٹیج پر جا کے انڈیا کو کتا کہتے ہیں مگر ہمارے گھرواں میں ہماری عورتوں کا لباس ،فیشن وہی ہوتا ہے جو انڈین فلموں میں دکھایا اور پہنا جاتا ہے ،اور یہ بھی انڈیا سے نفرت کا ایک انوکھا انداز ہے،کیونکہ ہمارے انداز ہی نرالے ہیں ۔
دنیا نے اپنی آنکھیں بند نہیں کر لیں ،جو کچھ ہو رہا ہے سب کے سامنے ہے اور سب کچھ ایک بنے بنائے منصوبے کے تحت کیا جا رہا ہے ،جس دیکھ کر دشمن خوش ہوتا ہے اور ہم دشمن کی چال میں پھنس کر کیا ثابت کرنا چاہتے ہیں ۔۔۔۔۔؟یہی کہ ہم ایک نرالی قوم ہیں ،اور جب ہماری آنکھ کھلے گی تو اس وقت دیر نا ہو چکی ہو

یہ بھی پڑھیں  رنبیراورکترینہ کیف کی منگنی

note

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker