تازہ ترینکالممیرافسر امان

ناموسِ رسالت مارچ کراچی

کراچی میں جماعت اسلامی کے تحت ایک عظیم شان ناموسِ رسالت ریلی نکالی گئی۔ تبت سنٹر کے قریب اور ہیڈ برج پر تقاریر کے لیے ناموسِ رسالت ریلی کا اسٹیج بنایا گیا تھا۔ برج پر بہت بڑا بینرآویزاں کیا گیا تھا تھا جس پر ’’ناموسِ رسالت مار چ کراچی…امریکی دہشت گردی کے خلاف‘‘ الفاظ تحریر تھے۔نیچے ایک طرف میڈیا کے لیے نشت کا انتظام کیا گیا تھا۔ ریلی کے آنے سے پہلے ہی میڈیا کے حضرات اپنی اپنی نشتوں پر لیپ ٹیپ سامنے رکھے موجود تھے اپنے اپنے ادروں کو پل پل کی خبریں بھیج رہے تھے ریلی کے پہنچنے سے چند منٹ پہلے میڈیا کی گاڑیاں بھی لائف کوریج کے لیے پہنچ گئی تھیں . دوسری طرف معلومات کے لیے استقبالیہ کیمپ بھی بنایا گیا تھا۔ جناب حافظ عبدالواحد شیخ نائب امیر جماعت اسلامی ضلع کراچی جنوبی اور جناب سید عبدالرشید نائب امیر جماعت اسلامی ضلع کراچی جنوبی اور سابق ناظم اعلیٰ اسلامی جمیعت طلبہ پاکستان کی نگرانی میں ریلی کے انتظامات اور اسکورٹی کے لیے کارکنان چاک و چوبند تھے. .. مزار قائد سے پیدل چلی ہوئی ناموسِ رسالت ؐ ریلی۴۵.۴ منٹ پر تبت سنٹر پر پہنچی۔ پیلی رنگ کے کپڑے پراللہ اکبر کے نعرے لکھی ہوئی پٹیاں سروں پر باندھے ، کلمہ طبیہ والے جماعت اسلامی کے ہزاروں سبزجھنڈے ہاتھوں میں لیے ہوئے تھے۔ ریلی کے شرکا کے ہاتھوں میں محمد ؐ نام لکھے ہوئے اور گو امریکا گو کے پلے بورڈ بھی تھے۔ جناب اسداللہ بھٹو امیر جماعت اسلامی سندھ،نائب امرء سندھ،جناب محمدحسین محنتی امیر جماعت اسلامی کراچی،نائب امراء کراچی کی قیادت میں،قائد اعظم ؒ کے مزار سے پیدل مارچ کرتے ہوئے ریلی کے شرکا کے ساتھ تبت سنٹر پہنچے تو ایک بہت ہی ایمان افروز سمع تھا عوام کا ٹھاٹیں مارتا ہوا سمندر کافی دیر تک اللہ اکبر اور ناموس رسالت ؐ پر جان بھی قربان کے نعرے لگاتا رہا… گو امریکا گو کے نعرے بھی لگتے رہے۔ شرکا نے امریکا کا جھنڈا بھی جلایا… اس کے فوراً نماز عصر کا اعلان کیا گیا نماز عصر کی آذان دی گئی اور محمد حسین محنتی کی امامت میں شرکا ریلی نے اللہ کے حضور نماز عصر ادا کی۔
باقائدہ پروگرام شروع ہونے سے پہلے میڈیا کے مالکان پر تنقید کرتے ہوئے اسٹیج سے اعلان کیا گیا کہ لندن والے کے خوف اور امریکا کے فنڈڈ میڈیا کی وجہ سے ہماری ریلیوں کی مناسب کوریج نہیں کی جاتی. گزشتہ دنوں جماعت اسلامی کراچی کی خواتین کی بہت بڑی ریلی منعقد کی گئی۔ ہزاوں خواتین اسلام نے اپنے شیرخوار بچوں کے ساتھ اس ریلی میں ناموس رسالتؐ کے ساتھ اپنی عقیدت کا اظہار کیا مگر میڈیا نے اس کی مناسب کوریج نہیں کی تھی۔ اس کے لیے احتجاج ریکارڈ کرانے کے لیے کیا شرکا ریلی کو اگر میکلوڈ روڈ کی طرف جانے کا کہا جائے تو آپ لوگ جائیں گے؟ سب نے پر جو ش نعروں کی گونج میں کہا جائیں گے۔اس اعلان کے فوراً بعد ریلی کا باقائدہ پروگرام تلاوت قرآن پا ک سے شروع کیا گیا جناب خالد منصور نے تلاوت کی۔ نعت رسول مقبول ؐ اور نعروں کے بعداسٹیج سے سب سے پہلے تقریر کے لیے جناب نصراللہ شجیع نائب امیر جماعت اسلامی کراچی کو بلایا گیا۔ انہوں نے ملکی حالت یعنی مہنگائی، بیروز گاری اور لا ء ایندڈ آڈر کے بعد مغرب کی ننگی تہذیب کا ذکر کیا کہ یہ تہذیب ہم سے بدلا لینے کے لیے رسول اللہ صلی علیہ وسلم کی شان میں خستاخی کرتی ہے۔ پاکستان امریکی غلامی میں چلا گیا ہے۔ہمارے صدر نے اقوام متحدہ میں خطاب کیا مگر امریکا کی اس خستاخی کے خلاف کوئی قراداد منظور نہیں کی گئی۔اس کے بعد انہوں نے اپنے پسندیدہ نعرے جو جماعت کی ہر ریلی اور جلوس میں لگایا کرتے ہیں ’’امریکہ کا جو یار ہے غدار ہے ٖدار ہے‘‘ کے نعروں کے بعد خطاب ختم کیا۔
اس کے بعد اسٹیج سے جناب حافظ محمد نعیم نائب امیر جماعت اسلامی کراچی کو تقریر کے لیے بلایا گیا۔انہوں نے کہا مغرب کا مسلمانوں کے کے خلاف شرم ناک رویہ نیا نہیں ہے ۔دنیا کو برداشت کا سبق پڑھانے والوں کی شر انگیزی پر ہم مغربی تہذیب کی مزمت کرتے ہیں۔امن کا سبق دینے والے امریکہ نے سب سے پہلے دہشت گردی کرتے ہوئے ناگا ساکی اور ہیرو شیما پر ایٹمی بم گرائے ۔ جنگوں میں امریکا نے دو کروڑ انسانوں کو قتل کیا ۔ افغانستان اورعراق پر حملہ کیا۔ کشمیر اور فلسطین کے مظالم میں برابر کا شریک ہے۔امریکی کے اس ظلم اور اب گستخانہ فلم کی وجہ سے مسلمان امریکہ سے نفرت کرتے ہیں۔میڈیا امریکہ ،یہودی اور ان کے مقامی ایجنٹوں کے تحت کام کر رہا ہے۔الطاف حسین جس نے کراچی میں دہشت گردی کی داغ بیل ڈالی اُس کی تو میڈیا پر کوریج ہوتی ہے ۔جماعت اسلامی پر امن اور لوگوں کی خدمت کرنے والی جماعت اقتدار میں ہو گی تو مغرب کو دہشت گردی کی جرائت نہ ہو گی انشا اللہ مستقبل اسلام کا ہے۔
جناب نسیم صدیقی قیم جماعت اسلامی کراچی جو اسٹیج سکریٹری کے فرائض ادا کر رہے تھے نے اسٹیج سے اعلان کرتے ہوئے کہا کہ خواتین کی ریلی کو مناسب کوریج نہیں دی گئی اور

یہ بھی پڑھیں  ایس ڈی او واپڈہ لیسکوسب ڈوثیرن رینالہ خوردکے چھاپے 5افراد بجلی چوری کرتے رنگے ہاتھوں پکڑے گئے

میڈیا آج اس لاکھوں کی ریلی کی مناسب کوریج نہیں کر رہا لیکن سوشل میڈیا سے اس کا مقابلہ کیا جائے گا۔ انتظامیہ نے کراچی آنے والی فلائٹ کنسل کروا دی تاکہ اس عظیم شان ریلی کی لیاقت بلوچ قیم جماعت اسلام پاکستان قیادت نہ کر سکیں۔اس کے بعد جناب محمد حسین محنتی امیر جماعت اسلامی کراچی کو تقریر کی دعوت دی گئی ۔ انہوں نے کہانبی ؐ کی ذات تمہاری ذات سے مقدم ہے۔مغرب نے اسلام کی ضد میں رسول اللہ ؐ کی زندگی اور قرآن کومستقل نشانہ بنایا ہوا ہے۔ نبی ؐ کی شان میں گستاخی کرتے ہوئے خاکے بنائے گئے۔ قرآن کے خلاف فیصلہ کیا گیا۔قرآن کو جلایا گیا پھر نبی ؐ کی شان کے خلاف گستاخانہ فلم بنائی گئی یہ ہمارے ایمان کو چیک کرنے کی کوشش ہے۔ اہل کراچی نے لاکھوں کی تعداد میں اس ریلی میں شریک ہو کر نبی ؐ سے محبت کا ثبوت دیا ہے۔مسلمان نبی ؐ پر اپنی جان قربان کرنے کے لیے تیار ہیں ۔ حاضرین سے پوچھا گیا کیا آپ جان قربان کرنے کے لیے تیار ہیں سب نے بلند آواز میں جواب دیا ہم تیار ہیں۔افغانستان میں امریکہ کے دو ہزار فوجی مر گئے اُس کو افغانستان میں شکست ہو گئی ہے۔آج کی پرامن عظیم شان ریلی فلم پر پابندی اور اقوام متحدہ سے اس کے چارٹر کے مطابق تمام مذاہب اور انبیا کے احترام کا کہتا ہے اس لیے انبیا کااحترام ہونا چاہیے اس کے لیے قانوں سازی ہونی چاہیے لوگوں سے پوچھا کیا آپ اسلام آباد مظاہرے کے لیے تیار ہیں سب نے کہا ہم تیار ہیں۔اس کے بعد جناب اسداللہ بھٹو امیر جماعت اسلام صوبہ سندھ کو تقریر کی دعوت دی گئی انہوں نے قرآن کی سورۃ کوثر کی تلاوت کے بعد کہا یہ ٹھاٹیں مارتا ہوا انسانوں کا سمندر ناموسِ رسالت ؐ کے لیے نکلا ۔ اس کے بعد انہوں نے سبحان اللہِ سبحانِ لعظیم پڑھ کر اللہ کی کبریائی بیان کی۔اس عظیم شان ریلی سے معلوم ہوتا ہے کہ یہ شہر امریکہ کے حواریوں کا نہیں بلکہ روسول اللہ ؐکے چاہنے والوں کا شہر ہے۔ناموس رسالت ؐ مخالفوں کو یہاں سے ہٹا کر دم لیں گے۔امریکہ کے حواریوں نے ہماری مخالفت میں اسی دن واک کا پروگرام رکھا۔یہ اپنی پھونکو سے اللہ کے نظام کو مٹانا چاہتے ہیں۔پاکستان کا صدر ہو یا وزیر اعظم ہمارا مطالبہ ہے امریکہ کے سفیر کو پاکستان سے نکالا جائے۔ فلم بنانے والوں کو گرفتار کیا جائے۔ پاکستان ساری دنیا کو ملا کر تحفظ رسالت ؐ کا قانون بنانے کی کوشش کرے۔ رسول اللہ ؐ کا شیدائی ممتاز قادری تو جیل میں بند ہے اور پاکستانیوں کو نا حق قتل کرنے والے ریمنڈ ڈیوس کو آذاد کر کے امریکہ بھیج دیا ہے۔ بھارتی قاتل جاسوسوں کو توچھوڑدیا گیا مگر عاشق رسولؐ ؐ
قید میں بند ہے ۔ممتاز قادری کی رہائی تک تحریک جاری رہے گے ۔ پاکستان کے میڈیا کا امتحان ہے ناموس رسالتؐ کے مقابلے میں امن ریلی کو بڑا کر کے دکھا یا گیا ہے۔بنی ؐ کی شان میں گستاخ فلم بنائی گئی اس میں امریکہ کا صدر بھی مجرم ہے وہ صرف مزاحمتی بیان دے کر جان نہیں چھڑا نہیں سکتا۔مجرموں کو سزا دینی ہو گی۔ امریکہ میں ایک شہری کی تو ئین کے لیے توقانوں موجود ہے مگر اللہ کے رسول ؐ کے لیے نہیں ہم نے پہلے بھی تحریک چلائی تھی اور اب بھی تحریک چلانے کے لیے تیار ہیں بنی ؐ کی شان پر جان بھی قربان ہے ۔ مسلمان تمام ملکوں سے مطابہ کرتے ہیں کہ توئین رسالت ؐ کے لیے قانون بنانے کی کوشش کی جائے۔ انشا اللہ فتح اسلام کی ہو گی۔ریلی کے شرکا کا شکریہ ادا کیا گیا آخر میں جناب محمد غفار عمر نائب امیر صوبہ سندھ کی دعاء پر ریلی کا پر وگرام ختم ہوا۔

یہ بھی پڑھیں  دہشت گردی کاخاتمہ اولین ترجیح ہے، وزیراعظم نوازشریف

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker