تازہ ترینعلاقائی

NUJ صحافیوں کی فلاح و بہبود کیلئے مصروف عمل ہے ، خواجہ اسحاق ایڈووکیٹ

کراچی ﴿ پ ر ﴾ نیشنل یونین آف جرنلسٹس ﴿ NUJ ﴾ کیخلاف گذشتہ دن بلوچستان کے کچھ اخبارات میں شائع ہونے والی ان خبروں کی پر کہ NUJ غیر رجسٹرڈ تنظیم ہے اور اسے کام کرنے سے روکنے کیلئے بلوچستان کے کچھ صحافی سیشن کورٹ جانے کا ارادہ رکھتے ہیں ، NUJ مرکزی لیگل ایڈ کمیٹی نے مرکزی آفس واقع ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی کراچی میں ایک اجلاس طلب کیا جس کی صدارت کرتے ہوئے معروف قانون دان خواجہ اسحاق ایڈووکیٹ نے کہا کہ الحمد اللہ NUJ ایک رجسٹرڈ تنظیم ہے اور تمام متعلقہ اداروں میں اس کا لیٹر آف رجسٹریشن بمعہ سرٹیفکیٹ جمع ہے ۔ قانون اور بائی لاز کے مطابق ہم صحافیوں کی فلاح و بہبود کیلئے کام کررہے ہیں اور کرتے رہیں گے ۔ اس سلسلے میں مرکزی آفس نے اپنی رجسٹریشن کے توسط سے بلوچستان آفس کا افتتاح کروایا اور آدم قادر بخش اور ساجد علی بلوچ کو بلوچستان کے صحافیوں کو آرگنائز کرنے اور سینٹرل کیبنیٹ تشکیل دینے کیلئے اتھارٹی لیٹر جاری کئے جس کیلئے تمام قانونی تقاضے پورے کئے گئے ہیں ۔ اگر کوئی شخص یہ سمجھتا ہے کہ بلوچستان میں NUJ کے کام کرنے سے اس کے مفادات کو ضرب پہنچے گی تو یہ محض اس کی سوچ ہوسکتی ہے ۔ NUJ نے متعلقہ رجسٹریشن اتھارٹی بلوچستان ہائی کورٹ اور سیشن کورٹ ، ڈی پی او گوادر اور دیگر متعلقہ اداروں کو مراسلات جاری کردیئے ہیں ساتھ ساتھ لیگل ایڈ کمیٹی نے گذشتہ دن اخباتارت میں شائع ہونے والی خبروں پر کہ NUJ غیر قانونی ہے خبر جاری کرنے والی اتھارٹی کیخلاف قانونی چارہ جوئی کی جائیگی جبکہ 20 جولائی سے اب تک گوادر آفس میں صرف آرگنائزنگ کے حوالے سے کام ہورہا ہے اور بلوچستان کے صحافیوں کی فلاح و بہبود کے حوالے سے پروجیکٹ تیار کئے جارہے ہیں اگر کوئی صحافی یا صحافی تنظیم یہ سمجھتی ہے کہ NUJ کسی کے مفادات کیلئے کام کررہی ہے تو وہ آئے ہمارے ساتھ بیٹھے ، ہمارے آئین کا مطالعہ کرے ۔ NUJ کا بنیادی مقصد فلاح و بہبود ہے ہم نے سیاست کرکے صحافیوں کے مقاصد کو نقصان نہیں پہنچانا ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker