تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ : جشن یوم آزادی کی مرکزی تقریب ڈی سی او آفس کے لان میں منعقد ہوئی

اوکاڑہ(بیورورپورٹ)جشن یوم آزادی کی مرکزی تقریب ڈی سی او آفس کے لان میں ہوئی تقریب میں ممبر قومی اسمبلی محمد عارف چوہدری،ممبر صوبائی اسمبلی میاں محمد منیر ،ڈی سی ا و قیصر سلیم،ڈی پی او فیصل رانا ،اے ڈی سی شیخ فرید احمد ،انجمن تاجران،ضلعی امن کمیٹی کے سماجی کارکنوں ،این جی اوز کے نمائندوں ،سرکاری افسران اور عوام کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔سائرن بجانے ایک منٹ خاموشی اور پرچم لہرانے کے بعد قومی ترانہ پیش کیا گیا ۔بعد ازاں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے محمد عارف چوہدری،میاں محمد منیر ،ڈی سی او قیصر سلیم،ڈی پی او فیصل رانا ،اے ڈی سی شیخ فرید احمد نے کہا کہ وطن عزیز عظیم قربانیوں کے بعد حاصل کیا گیا مودر وطن ہے اور حصول پاکستان کے بعد اب تکمیل پاکستان کے لئے ہم سب کو ان مسائل کو حل کرنا ہے جو ہماری غربت ،افلاس اور جہالت کی وجہ ہیں ۔ ملک کے ہر فرد کو خوشحالی کی منزل تک لے جانے کا عہد کرنا ہے ۔مقررین نے کہا کہ موجودہ حالات میں پاکستان کے تمام ادارے بشمول فوج،پولیس وطن عزیز کی خاطر بے پناہ قربانیاں دے رہے ہیں ملک کو امن کا گہوارہ بنانے کے لئے ان شہدا ء کی قربانیوں کو سلام پیش کرتے ہیں موجودہ حلات کے تناظر میں ہمیں اتفاق و اتحاد کی حقیقی ضرورت اب ہے پہلے کبھی نہ تھی پاکستان کے خلاف ہونیو الی سازشوں کو ناکام بنانے میں ہمیں ہمارے اداروں کے ساتھ ساتھ ہمارے اساتذہ اور بچوں تک نے جام شہادت نوش کیا ہے ہمیں آج یہ عہد کرنا ہے کہ اپنے شہداء کی قربانیوں کو رائیگاں نہیں جانے دیں گے پاکستا ن کو مضبوط ،خوشحال اور پر امن بنانے کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے اس موقع پر انرولمنٹ مہم کے دوسرے فیز کا افتتاح کیا گیا محمد عارف چوہدری،میاں محمد منیر ،ڈی سی او قیصر سلیم،ڈی پی او فیصل رانا ،اے ڈی سی شیخ فرید احمد نے اپنے ہاتھ سے داخلہ فورم پر کرنے کے بعد بچوں میں کتابیں اور بیگ تقسیم کئے ۔بعد ازاں اے ڈی سی شیخ فرید احمدنے حاضرین مجلس کا تقریب میں شرکت کرنے پر شکریہ ادا کیا اور پاکستان زندہ باد کے نعرے لگوائے ۔قبل ازیں پرچم کشائی کے بعد پولیس ،ایلیٹ فورس کے چاک و چوبند دستے نے سلامی دی اور قومی ترانے اور ملی نغموں کی دھن بھی بجائی گئی ٹی ایم او کی جانب سے حاضرین میں مٹھائی تقسیم کی گئی *

یہ بھی پڑھیں  میاں نوازشریف کاخط پاک نیوز لائیو کو موصول ہو گیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker