تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ: شہر فرقہ وارانہ منافرت و دہشت گردی سے ہمیشہ محفوظ رہا ہے اور رہیگا. مولانا سید انور شاہ بخاری

اوکاڑہ( بیورورپورٹ) مولانا اسحاق بدر کی گرفتاری اورضلعی انتظامیہ کی لاعلمی نیشنل ایکشن پلان پر کیے گئے تحفظات کو تقویت دیتی ہے ،اوکاڑہ شہر فرقہ وارانہ منافرت اور دہشت گردی سے ہمیشہ محفوظ رہا ہے ،شہر کے امن کو برباد کرنے والے خفیہ ہاتھوں کو بے نقاب کرنا وقت کی ضرورت ہے ۔ان خیالات کا اظہارمولانا اسحاق بدر کی گرفتاری پر سرپرست جمعیت علماء اسلام پنجاب حضرت مولانا سید انور شاہ بخاری نے ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر جے یو آئی پنجاب کے ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات حافظ عتیق الرحمان بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ جامعہ عید گاہ کے خطیب اورجے یو آئی تحصیل اوکاڑہ کے امیر مولانا اسحاق بدر جمعہ کی نماز پڑھانے کے بعد اپنے شاگرد کے ساتھ گھر جارہے تھے کہ ایجنسیوں کے لوگوں نے انہیں گرفتار کر کے نامعلوم جگہ پر منتقل کر رکھا ہے تین روز گزر جانے کے باوجود انتظامیہ نے کوئی ذمہ داری نہ لی ہے ضلعی صدر جے یو آئی اور عہدیداران کی درخواست پر پولیس کے اعلی احکام نے کوئی ایکشن نہ لیا ہے ڈی پی او اوکاڑہ سے تاحال ملاقات کا وقت نہ ملنے سے حکومت کے ساتھ جے یو آئی کا تعاون خطرہ میں پڑ سکتا ہے مولانا سید انور شاہ بخاری نے کہا کہ اگر چوبیس گھنٹوں میں مولانا اسحاق بدر کے بارے میں معلومات فراہم نہ کی گئیں تو ضلعی عاملہ کا اجلاس بلا کر آئندہ کے لائحہ عمل پر غور کیا جائے گا انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اوکاڑہ شہر کے امن وامان کو خراب نہ کیا جائے قاری راؤ تقی کو بھی بغیر کسی الزام کے جمعہ کے روز گرفتار کیا گیا ہے مدارس کے خلاف ایکشن اور بلاوجہ کی گرفتاریاں نیشنل ایکشن پلان پر کیے گئے ہمارے قائد مولانا فضل الرحمن کے تحفظات کو تقویت فراہم کرتا ہے حکومت مدارس کے خلاف بغیر کسی ثبوت کے ایکشن لے کر کیا ثابت کرنا چاہتی ہے مدارس اور مساجدسے ہر مسلمان کا رابطہ پانچ وقت رہتا ہے ان اداروں میں کسی بھی قسم کی فرقہ وارانہ سوچ اور دہشت گردی کا کوئی سوچ بھی نہیں سکتا *

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!