تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ :انٹر نیشنل اینٹی سموکنگ ڈے کے موقع پر قومی وسماجی تحریک موومنٹ اگینسٹ ڈرگ ابیوز (رجسٹرڈ)کے زیر اہتمام آگاہی لیکچر کا انعقاد

اوکاڑہ (بیورورپورٹ ) انٹر نیشنل اینٹی سموکنگ ڈے کے موقع پر قومی وسماجی تحریک موومنٹ اگینسٹ ڈرگ ابیوز (رجسٹرڈ)کے زیر اہتمام آگاہی لیکچر کا انعقاد ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے صدر "ماڈا” اوکاڑہ محمد مظہررشید چوہدری نے کہا کہ ہر سال دنیا بھر میں لاکھوں افراد سموکنگ کی وجہ سے مختلف بیماریوں کا شکار ہورہے ہیں جس میں پھیپھڑوں کا کینسر ،سرطان ،ہارٹ اٹیک اور شوگر جیسی خطرناک بیماریاں شامل ہیں اقوام متحدہ کے 170سے زائد ممالک میں 31مئی کو اینٹی سموکنگ ڈے 1987سے باقاعدگی سے منایا جاتا ہے پاکستان سمیت دنیا بھر میں سالانہ 40کھرب سے زائد سگریٹ پیئے جاتے ہیں ان اعداد وشمار میں سگار ،حقہ ،پائپ شامل نہیں ہیں غیر سرکاری اعدادوشمار کے مطابق پاکستان میں روزانہ 298 افراد سگریٹ نوشی کی وجہ سے مختلف بیماریوں کا شکار ہوکر موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں انہوں نے کہا کہ پھیپھڑوں کے سرطان میں مبتلا 75%مریض سگریٹ نوش ہوتے ہیں جو کہ لمحہ فکریہ ہے محمد مظہررشید چوہدری نے کہا کہ ایک رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں سگریٹ نوشی کی وجہ سے لگنے والی بیماریوں سے سالانہ 50لاکھ سے زائد افراد موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں اگر سگریٹ نوشی کا تدارک نہ کیا گیا تو چند سالوں کے بعد یہ تعداد 80 لاکھ سے تجاوز کر سکتی ہے سگریٹ کے دھوئیں میں 7000سے زائد کیمیکل شامل ہوتے ہیں سگریٹ نوشی یا اس کی وجہ سے مختلف بیماریوں کا شکار ہونے والوں کی اکثریت ترقی پزیر ممالک سے ہے سابق سینئر نائب صدر ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن اوکاڑہ مس صائمہ رشید ایڈووکیٹ نے کہا کہ پاکستان میں ممانعت سگریٹ نوشی کے قانون 2002کے مطابق سگریٹ نابالغوں کو فروخت نہیں ہوسکتی پبلک مقامات خاص طور پر ریلوے اسٹیشنوں ،بس اسٹینڈ،سکولوں ،کالجوں ،پارکوں ،بسوں وغیرہ میں سگریٹ نوشی کی ممانعت کا قانون موجود ہے لیکن افسوس اس بات کا ہے کہ سرکاری اداروں میں سگریٹ نوشی دھڑلے سے کی جاتی ہے جس پر سختی سے کاربند ہونے کی ضرورت ہے تعلیمی اداروں کی حدود سے 100میٹر تک سگریٹ نوشی اور فروخت کی ممانعت ہے مس صائمہ رشید نے کہا کہ پاکستان میں اس وقت تقریباََ تین کروڑ سے زائد افراد سگریٹ نوشی کرتے ہیں ان میں سے تقریباََ ایک لاکھ افراد سگریٹ کی وجہ سے لگنے والی بیماریوں سے متاثر ہوکر ہلاک ہوجاتے ہیں پاکستان میں 44%فیصد مرد اور8%فیصد خواتین سگریٹ نوشی کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ دین اسلام کی تعلیمات پر عمل کر کے ہم مختلف بیماریوں اور خرافات سے بچ سکتے ہیں آگاہی لیکچر میں ممبران "ماڈا” عرفان اعجاز ،مس تزئین ، مس اقراء ،مس میمونہ ،مس تحریم ،میاں طاہر رشید ،چوہدری عدنان اعجاز و دیگر نے شرکت کی *

یہ بھی پڑھیں  افسوس صدافسوس

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker