تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ:مرضی سے شادی کرنے والی لڑکی کے عدالت میں بیان کے باوجود تنگ کیاجارہا ہے

Safia Bibi Telling Storyاوکاڑہ (نمائندہ خصوصی) اوکاڑہ کے نواح میں اپنی مرضی سے شادی کرنے والی لڑکی کے خاوند اور اس کے بھائیوں کولڑکی کے عدالت میں بیان کے باوجود تنگ کیا جارہا ہے لڑکی نے اپنے بھائی کی طرف سے درج مقدمہ جھوٹ کا پلندا قراردے دیا نواحی قصبہ ٹھٹھ باقرکا مردانی کے رہائشی محمد اسمٰعیل مرحوم کی بیٹی بیس سالہ صفیہ بی بی نے اپنے کزن محمد حسین سے اپنی مرضی کے مطابق شادی کرلی جس پر صفیہ بی بی کے بھائی محمد احمد نے محمد حسین اور اسکے دیگر اہل خانہ کے خلاف اغواء کا مقدمہ تھانہ گوگیرہ میں درج کرادیا صفیہ بی بی نے علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں بیان دے دیا کہ اس نے اپنی مرضی سے محمد حسین کے ساتھ شادی کرلی ہے مجھے کسی نے اغواء نہیں کیا ہفتہ کے روز صفیہ بی بی نے اوکے میڈیا سنٹرکے دفتر آکر اپنا بیان دیا کہ وہ اپنے خاوندمحمد حسین کے ساتھ آزادانہ زندگی گزارنا چاہتی ہے اس نے بغیر کسی دباؤ اور لالچ میں آئے محمد حسین سے شادی کی میرے بھائی محمد احمد نے میرے خاوند اور دیگر کے خلاف اغواء کاجھوٹا اور من گھڑت مقدمہ درج کرایا ہے اس کے متعلق مقامی عدالت میں اپنا بیان ریکارڈ کرادیا ہے اپنے اچھے اور برے کا بخوبی علم ہے اور کوئی بھی فیصلہ کرنے کا قانونی اور شرعی حق رکھتی ہوں مجھے ،میرے خاوند اور میرے خاوند کے اہل خانہ کو بلا وجہ تنگ نہ کیا جائے

یہ بھی پڑھیں  بھارتی ’لوک سبھا‘ تحلیل

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker