تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ: صنفی تضاد ختم کیے بغیر کوئی معاشرہ پائیدار ترقی کے اہداف حاصل نہیں کر سکتا . وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد زکریا ذاکر

اوکاڑہ (محمد مظہررشید چودھری سے) صنفی تضاد ختم کیے بغیر کوئی معاشرہ پائیدار ترقی کے اہداف حاصل نہیں کر سکتا، وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد زکریا ذاکر،تفصیلات کے مطابق صنفی بنیادوں پہ تشدد کے خلاف کل سے شروع ہونے والی سولہ روزہ عالمی مہم کے سلسلے میں اوکاڑہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد زکریا ذاکر نے اپنے ایک خصوصی بیان میں کہا ہے کہ معاشرتی دھارے میں خواتین کی شمولیت کے بغیر ملک پائیدار ترقی کے اہداف حاصل نہیں کر سکتا جن معاشروں میں صنفی تضاد اور خواتین پہ تشدد جیسے مسائل موجود ہوں، وہ معاشرتی اور معاشی بہتری کی دوڑ میں پیچھے رہ جاتے ہیںصنفی تفریق کے خاتمے اور خواتین کے حقوق کے تحفظ میں تعلیم کے کردار کی اہمیت پہ روشنی ڈالتے ہوئے پروفیسر زکریاذاکر نے بتایا کہ خواتین ہماری آبادی کا تقریبا نصف ہیں اور اس طرح سے ملکی ترقی میں ان کا کردار نہایت اہم ہے۔ اگر ہم اس نصف آبادی کو تعلیم سے محروم رکھتے ہیں تو ہم ان کو عملی طور پہ ناکارہ بنا دیں گے وائس چانسلر کا مزید کہنا تھا کہ حکومت کااوکاڑہ یونیورسٹی کی طرز پہ ضلعی سطح پر یونیورسٹیاں قائم کرنے کا فیصلہ خوش آئند ہے۔ یہ یونیورسٹیاں معاشرے سے صنفی تفریق کو کم کریں گی کیونکہ اب پسماندہ طبقات کی لڑکیوں کو اعلی تعلیم کے زیادہ اور آسان مواقع دستیاب ہوں گے۔ ہر سال نومبر 25 سے دسمبر 16 تک کا دورانیہ دنیا بھر میں صنفی بنیادوں پہ تشدد کے خلاف مہم کے طور پر منایا جاتا ہے۔ اوکاڑہ یونیوسٹی کے ترجمان کے مطابق ان 16 دنوں کے دوران خواتین کے حقوق کی آگاہی کے حوالے سے آن لائن سیمینارز بھی منعقد کیے جائیں گے٭

یہ بھی پڑھیں  نتھے جاگیر:بوائزمڈل سکول کی دیواروں کے ساتھ پانی اورگندگی کے ڈھیر

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker