تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ :اوکاڑہ شہر کے طلباوطالبات کیلئے بہت جلد چارٹرڈ یونیورسٹی کا قیام بھی عمل میں لایا جا رہا ہے جسکے لئے تقریباً ایک ہزار ایکڑ اراضی حاصل کی جا رہی ہے

اوکاڑہ ( بیورورپورٹ)گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج اوکاڑہ میں مستقبل قریب میں ایم اے بلاک کا قیام عمل میں لایا جائے گا جس میں ایم اے کی تعلیم حاصل کرنے والے طلباو طالبات ڈور سٹیپ پر اپنی تعلیم مکمل کر سکیں گے اسکے علاوہ وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف اوروزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کی علم دوست پالیسی کے تحت اوکاڑہ شہر کے طلباو طالبات کیلئے بہت جلد چارٹرڈ یونیورسٹی کا قیام بھی عمل میں لایا جا رہا ہے جسکے لئے تقریباً ایک ہزار ایکڑ اراضی حاصل کی جا رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج میں بی ایس سی کلاسز برائے گرلز کی افتتاحی تقریب کے موقع پر مہمان خصوصی ممبر نیشنل اسمبلی چوہدری محمد عارف نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پرنسپل ظفر علی ٹیپو، ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز محمداقبال ڈھلوں، پروفیسر سلیم طاہر ، پروفیسر رضا اللہ سمیت دیگر ماہرین تعلیم اور بی ایس سی کی سینکڑوں طالبات بھی موجود تھیں ایم این اے چوہدری محمد عارف نے مزید کہا کہ انھوں نے ہمیشہ سیاست کو عبادت سمجھ کر کیا ہے اور یہی وجہ ہے کہ ہر وقت اوکاڑہ کے عوام کی بھلائی کیلئے سر گرم عمل رہنا اپنا شعار بنا لیا ہے انھوں نے کہا کہ بہت جلداوکاڑہ کے ڈسٹرکٹ ہسپتال کو سی گریڈ سے چار صد بیس بیڈ پر مشتمل کرکے اے گریڈ کے درجہ دلایا جائیگا تا کہ اوکاڑہ میں میڈیکل کالج کے قیام کیلئے راہیں ہموار ہو سکیں ۔ ان سے قبل گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج کے پرنسپل پروفیسر ظفر علی ٹیپو نے اپنے استقبالیہ خطاب میں مہمان خصوصی کا شکریہ ا دا کرتے ہوئے کہا کہ اوکاڑہ ضلع میں تقریباً سات کالجز ہیں مگر گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج میں بی ایس سی کلاسز کے اجراء کو تاریخی حیثیت ملی ہے اور والدین کے دیرینہ خواب کو بھی تعبیر ملی ہے کیونکہ والدین کو دوسرے شہروں میں بی ایسی سی کی تعلیم کیلئے بھیجنا اور دیگر پرائیویٹ اداروں کی مہنگی فیسیں بھرنا کافی مشکل ہوتا تھا اور اب اوکاڑہ کالج کے بہترین ماہرین تعلیم بھر پور محنت اور لگن سے طالبات کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کریں گے ۔ انھوں نے کالج میں ٹف ٹائلز لگوانیکا مطالبہ کیا جسے مہمان خصوصی نے پورا کرنے کی یقین دہانی کروائی *

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker