تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ:پولیس زیادتی کا شکار شہری اپنے بیٹے کے ہمراہ پریس کانفرنس کر رہا ہے

NEWS 31-05-2013اوکاڑہ (محمد مظہر رشید) ہا ئی کو رٹ کے حکم کے باوجود پو لیس افسران کے خلاف میر ا مقد مہ درج نہیں کیا گیا،پولیس نے میر ے مخالف کے سا تھ ساز باز ہو کر مجھے اور میر ے بیٹے کو اغوا کر کے تشدد کیا، کو ٹ نہا ل سنگھ کے رہا ئشی غلام رسول نے اپنے بیٹے تنو یر کے ہمراہ پر یس کا نفر نس کر تے ہو ئے کہا کہ سابق ایس ایچ او تھا نہ بی ڈویژن اوکاڑہ اللہ دتہ بھٹی ،سب انسپکٹر سردار لیا قت ڈوگر ،سب انسپکٹرعمران علی ،اے ایس آئی رانا محمد اشرف ودیگر پو لیس ملز مان نے سابق ڈی پی او ڈاکٹر حیدر اشرف اور ڈی ایس پی سٹی کی ایما ء پر میر ے مخا لف کے ساتھ مل کر تھا نہ بی ڈویژن کی پولیس غیر سرکاری گا ڑی میں میر ی دو کان سے مجھے اورمیر ے بیٹے محمد تنویر سمیت اغوا کر لیا اور چا ر دن تھا نہ میں بند رکھا اور میر ے اور میر ے بیٹے کے خلاف تھا نہ بی ڈویژن میں ایک جھوٹا مقد مہ درج کر لیا، جس پر میں نے ملز مان کے خلاف لا ہور ہا ئی کو رٹ میں اندارج مقدمہ کی رٹ دائر کر دی، جس پر جسٹس یاور علی کی عدالت نے دو ماہ قبل آئی جی پنجاب کو حکم دیا کہ میرا مقد مہ در ج کیا جائے لیکن آئی جی نے اس کو آر پی او ساہیو ال کو بھیج دیا جس نے ایس ایس پی احسان منظور کو انکوائری آفیسر مقرر کر دیا جس نے ڈی پی اوکی انکوائر ی انسپکٹر مہر نو ر کو دے دی لیکن میرا مقد مہ ابھی تک درج نہ کیا گیا ہے،بلکہ مجھے جھو ٹے مقد مات میں ملوث کر نے کی دھکمیاں دی جارہی ہیں ،غلام رسول نے کہا آئی جی پنجاب میر ا مقد مہ درج کر کے میر ے ملزمان کے خلاف محکمانہ کا روائی کر یں اور چیف جسٹس پا کستان افتخار محمد چو ہدری سے اپیل کر تا ہو ں کہ وہ مجھے اور میر ے بیٹے کو انصاف دلائیں *

یہ بھی پڑھیں  یہ حوثی بغاوت ہے ،تنازع نہیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker