تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ : انجمن مزارعین پنجاب کا احتجاجی جلوس

اوکاڑہ (بیورورپورٹ)نائب صدر انجمن مزارعین پنجاب چوہدری ندیم اشرف کیخلاف جھوٹے مقدمے اور سات مزارعین کی گرفتاری کیخلاف انجمن مزارعین پنجاب کا احتجاجی جلوس ،مزارعین رہنماؤں کیخلاف جھوٹے مقدمات کے خاتمہ تک احتجاج جاری رہیگا،مہرعبدالستار جنرل سیکرٹری انجمن مزارعین پنجاب تفصیلات کے مطابق انجمن مزارعین پنجاب نے پولیس انتظامیہ کی جانب سے نائب صدر انجمن مزارعین پنجاب چوہدری ندیم اشرف اور اسکے بھائیوں کو جھوٹے مقدمے میں گنہگارکرنے اور سات مزارعین کی گرفتاری کیخلاف اوکاڑہ میں احتجاجی جلوس نکالا جس میں ہزاروں کی تعداد میں مزارعین شامل تھے ۔بائیل گنج سٹڈفارم پاکپتن شریف اور پروبن آباد تحصیل دیپالپور کے مزارعین اللصبح ہی بسوں اور موٹر سائیکلوں پر سوار ہو کر اوکاڑہ بائی پاس پر اکھٹے ہوگئے یہاں پر ملٹری فارم اوکاڑہ ملٹری فارم رینالہ اسٹیٹ اور کلیانہ اسٹیٹ کے مزارعین بھی ٹریکٹرٹرالیوں ،موٹرسائیکلوں اور گاڑیوں پر جلوسوں کی شکل میں پہنچنا شروع ہو گئے مزارعین نے سرخ رنگ کے ہل والے نشان کے جھنڈے پکڑے ہوئے تھے جبکہ کچھ مزارعین نے بینرز بھی اٹھارکھے تھے جن پر مزارعین کیساتھ ہونے والی زیادتیوں اور جھوٹے مقدمات کیخلاف تحریر یں درج تھیں جلوس اوکاڑہ بائی پاس سے شروع ہو کر چونگی نمبر6اوکاڑہ سے ہوتا ہوا صمدپورہ اوکاڑہ،سرورسوڈاواٹر چوک ،چرچ رود ،غوثیہ چوک،پریس کلب اوکاڑہ اور پھر گول چوک سے ہوتا ہوا ایم اے جناح روڈ ٹینک چوک اوکاڑہ میں جلسہ کی شکل اختیار کر گیا یہاں انجمن مزارعین پنجاب کے جنرل سیکرٹری مہر عبدالستار نے شرکاء جلوس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 2000 ؁ء سے قبل مزارعین کیخلاف ایک بھی مقدمہ درج نہ تھا لیکن جب سے مزارعین نے مالکانہ حقوق کی جدوجہد شروع کی ہے اسوقت سے مزارعین اور قیادت کیخلاف جھوٹے مقدمات درج ہونے کا سلسلہ جاری ہے اور اب ریاستی اداروں نے جرائم پیشہ عناصر کا سہارا لے لیا ہے ندیم اشرف کیخلاف بھی جھوٹا مقدمہ اسی سلسلہ کی کڑی ہے اور اس پر ہونے والی جانبدارانہ تفتیش کو ہم ہرگز تسلیم نہیں کرتے آج ہم یہ واضح کرنا چاہتے ہیں کہ جھوٹے مقدمات کی آڑ میں مزارعین کی قیادت کو جیلوں میں نہیں ڈالا جاسکتا اور نہ ہی ہمارے عزم کو شکست دی جاسکتی ہے گذشتہ دنوں رینالہ اسٹیٹ کے چک نمبر20/1Rمیں پولیس کی ندیم اشرف کے گھر لوٹ مار اور توڑ پھوڑ اور گاؤں کے دیگر10گھروں میں لوٹ مار کی ہم پر زورمذمت کرتے ہیں اس لوٹ مار میں پولیس نے مزارعین کے گھروں سے طلائی زیورات اور نقدی رقم جس کی مالیت 25سے30لاکھ روپے بنتی ہے کی ہے جس کی ہم پرزور مذمت کرتے ہیں اور ذمہ دار پولیس ملازمین کیخلاف کاروائی کا مطالبہ کرتے ہیں صدر انجمن مزارعین کلیانہ اسٹیٹ ملک محمد سلیم جکھڑنے مزارعین سے کہا کہ گذشتہ 14سالوں سے پولیس انتظامیہ جھوٹے مقدمات درج کر کے نام نہادسیاستدانوں کی مداخلت سے تفتیش پر اثرانداز ہوتی ہے اور ہمیں گنہگار کرواکر سزائیں دلانا چاہتی ہے لیکن ہم اس زیادتی پر خاموش نہیں بیٹھیں گے صدر انجمن مزارعین پنجاب میاں خوشی محمد ڈولہ نے کہا کہ ایک صدی قبل ہمارے آباؤ اجدادنے ان زمینوں کو آباد کیا لیکن ریاستی ادارے مزارعین دشمنی میں اس حد تک آگے جاچکے ہیں کہ پرامن مزارعین پر جھوٹے مقدمات درج کر کے مالکانہ حقوق سے انہیں دستبردار کروانا چاہتے ہیں لیکن ان اوچھے ہتھکنڈوں سے ہم مرعوب ہونے والے نہیں ہماری تاریخ شہادتوں سے بھری پڑی ہے جھوٹے مقدمات اور جیلیں ہمیں مالکانہ حقوق کی جدوجہد سے نہیں روک سکتیں اور نہ ہی ہم مالکانہ حقوق کی جدوجہد سے دستبردار ہونگے جلسہ سے صدر انجمن مزارعین دیپالپور شبیر ساجدمیڈیا ایڈوائزر،چوہدری نورنبی ایڈووکیٹ ،حاجی غلام حسین اور چیئرمین انجمن مزارعین پنجاب چوہدری لیاقت نے بھی خطاب کیا*

یہ بھی پڑھیں  ڈسکہ:مضر صحت گوشت کی فروخت عروج پر ویٹرنری ڈاکٹر قصابوں کے سامنے بے بس

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker