تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ : ضلع وتحصیل کی سطح پرگندم خریداری کے سلسلہ میں سپروائزی کمیٹیاں بنا دی گئیں . محمد ریاض

اوکاڑہ(بیورورپورٹ) گندم کی خریداری مہم کو شفاف اور کسان دوست بنانے کے لئے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شر یف کی کاوشیں لائق تحسین ہیں کسانوں کی مشکلات اور مسائل کو حل کرنے کے لئے پنجاب حکومت اربوں روپے کے فنڈز مختص کئے ہوئے ہے امسال پورے پنجاب میں 40لاکھ ٹن سے زائد گندم خرید کی جائے گی جس پر 130ارب روپے سے زائد خرچ کئے جائیں گے ضلع اور تحصیل کی سطح پر گندم خریداری کے سلسلہ میں سپر وائزی کمیٹیاں بنا دی گئی ہیں جبکہ خریداری سنٹروں پر تنازعات کو موقع پر حل کرنے کے لئے کمیٹیاں بنائی گئی ہیں جن میں کاشتکاروں کے نمائندے بھی شامل ہیں سٹیزن فیڈ بیک کے ذریعے شکایات کے ازالہ کے لئے فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں ان خیالات کا اظہار گندم خریداری مہم کے سلسلہ میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر محمد ریاض ،اسسٹنٹ کمشنر دیپالپور امتیاز احمد کھچی،ای ڈی او زراعت ڈاکٹر شیر محمد شیراوت ،ڈپٹی ڈائریکٹر فوڈ ساہیوال سمیت کاشتکاروں کے نمائندوں نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے امسال فی ایکٹر باردانہ 8کی بجائے 10بوری فی ایکٹر کر دی ہے اور ڈیلیورے چارجز7.50روپے فی سو کلو گرام کی بجائے 9روپے فی سو کلو گرام کر دئیے ہیں جو کہ کاشتکارو ں کی سہولت کی لئے احسن قدم ہے کاشتکاروں کے نمائندوں نے باردانہ کی فراہمی کے پہلے پانچ دن 12.5ایکٹرتک کے کاشتکاروں کے لئے مختص کرنے اور پہلے آئیے پہلے پائیے کی بنیاد پر جاری کرنے کی پالیسی کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس سے نہ صرف چھوٹے کاشتکاروں کے مسائل حل ہوں گے بلکہ چھوٹے کاشتکاروں کو بروقت ادائیگی ممکن ہو سکے گی۔اے ڈی سی محمد ریاض نے کہا کہ ضلع میں گندم کی خریداری مہم کو شفاف بنانے کے لئے کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں کیا جائے گا کسانوں کو پالیسی کے مطابق تمام سہولتیں فراہم کرنے ،خریداری سنٹروں پر پینے کے ٹھنڈے پانی کے انتظام ،بیٹھنے کے لئے سایہ دار جگہوں کے انتظام سمیت سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے جائیں*

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker