تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ : دنیا میں امن کی کلید نبی کریم ﷺ کی تعلیمات پر عمل پیرا ہو نے میں ہے . ڈپٹی ڈائر یکٹر انفارمیشن خورشید جیلانی

اوکاڑہ( محمد مظہررشید چودھری سے)دنیا میں امن کی کلید نبی کریم ﷺ کی تعلیمات پر عمل پیرا ہو نے میں ہے اللہ تعالیٰ نے دنیا و آخرت کی کامیابی حضور اکرم ﷺ کے اسوہ حسنہ میں رکھی ہے دور جدید میں انسان جن پریشانیوں اور مصائب کا سامنا کر رہا ہے ان کا جامع حل حضور اکرم ﷺ نے پیش کیا ہے عصرحاضر میں عالمی امن کے لئے خطرہ بننے والے نا عاقبت اندیش لوگ جب مکرم و محترم ہستیوںکی شان میں گستاخی کریں گے تو اہل محبت کا دل دکھے گے اوراس کا شدید رد عمل بھی سامنے آئے گا ۔ان خیالات کا اظہار علامہ ظفر اللہ قمر لکھوی ،سلسلہ سہر وریاں کے پیر نسیم الدین، قاری سعید عثمانی اور ڈپٹی ڈائر یکٹر انفارمیشن خورشید جیلانی نے جامعہ محمدیہ میں سیرت کانفرنسﷺ کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ مقررین نے کہا کہ بطور مسلمان ہماری یہ ذمہ داری ہے کہ ہم ذاتی مفادات کو پس پشت ڈال کر امت مسلمہ کے مفادات کو اولین اہمیت دیں ایک مسلمان کی حیثیت سے پوری دنیاکو یہ پیغام دینا ہے کہ مسلمان کسی صورت اپنے بنی کریم حضرت محمد ﷺ کی شان میں گستاخی برداشت نہیں کر سکتا علماءو مشائخ نے حاضرین پر زور دیا کہ وہ بحثیت مسلمان پوری دنیا کے لئے مثال بنیں ۔نبی کریم ﷺ نے زندگی کے ہر شعبہ میں عملی نمونہ پیش کیاہے اور ہمیں اپنے آپ کو ان کی تعلیمات کے مطابق ڈھالنا ہے انہوں نے کہا کہ دنیا میں امن کے لئے انصاف کا ہونا اولین شرط ہے عالمی سطح کے امن کے لئے ضروری ہے کہ ہر شخص دوسروں کے لئے ہمدردی ،خیر خواہی اور محبت کا جذبہ رکھے اور اس کے دکھ کو اپنا دکھ محسوس کرے دنیا میں سب سے مکرم ومحترم نبی کریم ﷺ کی ذات با برکات ہے اور ان کی ذات پوری کائنات کے لئے رحمت بنا کر بھیجی گئی ہے ان کی شان میں گستاخی کے مرتکب لوگ عالمی امن کے دشمن اور انتہائی نادان ہیں امن وآشتی کا جو درس محسن انسانیت نبی کریم ﷺ نے دیا ہے اس کی مثال تاریخ عالم میں نہیں ہے مقررین نے کہا کہ کامیابی یہ ہے کہ ہم اپنے رہبر وحادی مرشد کامل حضرت محمد ﷺ کی تعلیمات کو مکمل طور پر سمجھ کر اس پر عمل پیرا ہوں اور پوری دنیا کے لئے قابل تقلید بن سکیں ۔سیرت کانفرنس ﷺ کے اختتام پر نبی کریم ﷺ کی بارگاہ میں ہدیہ نعت اور درود و سلام پیش کیا گیا٭

یہ بھی پڑھیں  چیئرمین مہاجر قومی موومنٹ آفاق احمد کو دل کا دورہ

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker