شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / جعلی بینک اکاؤئنٹس اور ٹھٹھہ شوگر ملز نجکاری کیس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے تحقیقات مکمل

جعلی بینک اکاؤئنٹس اور ٹھٹھہ شوگر ملز نجکاری کیس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے تحقیقات مکمل

اسلام آباد(پاک نیوز)نیب نے تحقیقاتی ٹیم نے جعلی بینک اکاؤئنٹس کیس اور ٹھٹھہ شوگر ملز نجکاری کیس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے تحقیقات مکمل کرلی ہے۔ذرائع کے مطابق ڈی جی نیب راولپنڈی کی سربراہی میں پانچ رکنی تحقیقاتی ٹیم نے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے پوچھ گچھ کی،ٹھٹھہ شوگر ملز کی نجکاری کیس میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بتایا کہ ٹھٹھہ شوگر ملز کی نجکاری کا آغاز مشرف دورمیں سال دوہزار دو میں ہوا اور دوہزار بارہ تک اس کی نجکاری کی چھ بار کوشش کی گئی۔وزیراعلیٰ سندھ نے نیب حکام کو بتایا کہ دوہزار بارہ میں ٹھٹھہ شوگرملز کی نجکاری میں دو کمپنیوں نے بولیاں دی تھی،اومنی گروپ کے مقابلے میں دوسری کمپنی نے 25 فیصد کی ابتدائی رقم جمع نہ کروائی،رقم جمع نہ کروانے پر ملز دوسری بولی دینے والے اومنی گروپ کودے دی گئی تھی۔ذرائع کے مطابق مراد علی شاہ نے نیب حکام کو بتایا کہ ٹھٹھہ شوگرملز دوہزار بارہ میں اومنی گروپ کو 127.5 ملین روپے میں دی گئی،اس سے قبل ٹھٹھہ شوگر ملز سندھ شوگر کارپوریشن کے زیرانتظام تھی، مراد علی شاہ نے بطور وزیرخزانہ سندھ ٹھٹھہ شوگرملز کی نجکاری کیلئے آخری دستخط کیے تھے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب حکام کے سامنے پیشی پر مراد علی شاہ کچھ دستاویزات بھی ساتھ لائے تھے

یہ بھی پڑھیں  ضمنی انتخابات :ملک کے 33 اضلاع میں 22 اگست کو عام تعطیل ہوگی