پاکستانتازہ ترین

امید ہے طالبان سے مذاکرات سے متعلق عمران خان ملک کے مفاد میں فیصلہ کریں گے، مولانا سمیع الحق

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) جمعیت علمائے اسلام (س) کے سربراہ اور  تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے حکومت سے مذاکرات کےلئے تشکیل دی جانے والی کمیٹی کے رکن مولانا سمیع الحق کا کہنا ہے کہ عمران خان بڑی شدو مد کےساتھ مذاکرات کے حامی رہے ہیں اب انہیں ملک میں لگی آگ بجھانے کا موقع ملا ہے اور مجھے امید ہے کہ وہ اپنا کردار ادا کریں گے۔ طالبان کی مذاکراتی کمیٹی کے اسلام آباد میں اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے مولانا سمیع الحق کا کہنا تھا کہ عمران خان سے توقع ہے کہ وہ ملک کے مفاد میں بہتر فیصلہ کریں گے، عمران خان کا بھی یہ مطالبہ تھا کہ طالبان کے معاملے کو فوجی طاقت کے بجائے مذاکرات کے ذریعے حل کیا جائے اور اس حوالے سے انہوں نے دھرنے دیئےاور نیٹو سپلائی بھی روکی۔ اب اللہ تعاولیٰ نے انہیں ایک موقع دیا ہے کہ وہ ملک میں لگی آگ کو بجھانے میں تعاون کریں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان سے مایوس نہیں ہوں، ان کے وزیر اعلیٰ نے مجھ سے رابطہ کیا ہے اور اس کمیٹی پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے مکمل تعاون کی بھی یقین دہانی کرائی ہے۔ مولانا سمیع الحق نے کہا کہ یہ مسئلہ ملا، طالبان ،غیر طالبان یا مسٹر کا  نہیں بلکہ  قوم کا  ہے، اس وقت پورا ملک آگ میں جل رہا ہے اور مستقبل میں بھی ایسے بہت سے خطرات سامنے آسکتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ کمیٹی کے اجلاس کے دوران ہم نے یہ طے کیا ہے کہ بہت جلد سرکاری کمیٹی سے رابطہ کیا جائے گا اور ہوسکتا ہے دونوں کمیٹیوں کا بہت جلد ایک مشترکہ اجلاس بلایا جائے جس میں یہ بات واضح کی جائے گی کہ طالبان سے کس جگہ مذاکرات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ  تمام معاملات سے میڈیا کو مکمل طور پر باخبر رکھا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button