پاکستانتازہ ترین

اسلام مخالف فلم، ممبئي میں یوٹیوب پر مقدمہ

اسلام آباد(مانیٹرنگ سیل) بھارت کے صنعتی شہر ممبئی کی ہائی کورٹ میں امریکہ میں بننے والی پیغمبر اسلام کے خلاف متنازعہ فلم کے تعلق سے یوٹیوب پر مقدمہ درج کیا گيا ہے۔ممبئی کے ایک مقامی وکیل اعجاز نقوی نے پیر کو اس فلم کے پروڈیوسر اور یوٹیوب پر فلم کے ٹریلر ڈالنے کے خلاف مقدمہ دائر کیا ہے۔ اس کیس کی سماعت ممبئی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کھن ولکر کریں گے۔ وکیل نے دائر کیا ہے۔مسٹر ادریسی نے فلم کے ٹریلر نشر کرنے پر گوگل کے چیف ایگزکٹیو لیری پیج کے خلاف کاررائی کا مطالبہ کیا ہے اور گوگل اور یوٹیوب پر مقدمہ چلانے کی بات کہی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ یوٹیوب پر فلم کے آنے سے مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔ وکیل اعجاز نقوی کے مطابق مقدمہ پیر کو دائر کیا گیا ہے اور اسی روز اس پر سماعت کی توقع ہے۔بھارت میں متنازع فلم کے ٹریلر اور اس کے جزوی حصے اب بھی یوٹیوب کی سائٹ پر دیکھے جا سکتے ہیں اور عرضی گزار کا کہنا ہے اگر انہیں نا ہٹایا گیا تو اس سے حالات مزید کشیدہ ہو سکتے ہیں۔’انوسینس آف مسلم‘ نامی اس فلم کے خلاف دنیا بھر کے مسلم ممالک میں احتجاجی مظاہرے ہوئے ہیں اور بھارت کے بھی بعض شہروں میں اس کے خلاف آواز اٹھائی گئی۔بھارت میں اس فلم کے خلاف سب سے زیادہ مظاہرے جنوبی ریاست تمل ناڈو اور بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں دیکھنے میں آئے۔

یہ بھی پڑھیں  رینالہ خورد:النورگروپ آف سکول کے چیرمین راؤذوالفقارعلی کے والد کی وفات پررینالہ پریس کونسل کاتعزیتی اجلاس

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker