تازہ ترینکالممحمداعظم عظیم اعظم

پاکستانیوں کی زبان پرتو امن کی آشاکی رٹ

Azam Azim Azamپچھلی کئی دہائیوں سے پاکستان میں شدت سے ہونے والے فرقہ ورانہ فسادات اور بڑھتی ہوئی دہشت گردی سمیت سارے ملک میں طرح طرح کے پیش آنے والے بم دھماکوں کے واقعات اور اِن دھماکوں کے نتیجے میں معصوم انسانوں کی ہلاکتوں کے بعد پیداہونے والی صُورتِ حال سے کون ایسا شخص ہوگا جو واقف نہ ہواور اِسی کے ساتھ ہی ملک کے طول ارض میں بسنے والا کوئی ایساپاکستانی نہیں ہے جوآج یہ بھی نہ جانتاہوکہ پاکستان میں ہونے والے فرقہ ورانہ فسادات اور دہشت گردی کے واقعات کے پسِ پست ہمسایہ ملک بھارت کی خفیہ ایجنسیوں کا ہاتھ ہے مگرپھربھی یہ ہم پاکستانیوں کا ہی بے مثل ظرفِ عظیم ہے کہ ہم نے کبھی بھو ل کر بھی اِس مُلک اور اِس کے خفیہ ایجنسیوں کے ہاتھ کا ذکرکہیں بھی نہیں کیاہے جو گزشتہ کئی سالوں سے ہمارے یہاں قتل وغارت گری اور بہانے بہانے سے دہشت گردی کا بازار گرم کئے ہوئے ہیں ۔
جبکہ آج ہم پاکستانیوں کی اِس نقطے پر کوئی دورائے نہیں ہے اور کوئی بھی پاکستانی اِس سے اِنکار نہیں کرسکتاہے کہ ہمارے یہاں ہونے والی ہر چھوٹی بڑی دہشت گردی کے پیچھے بھارت اور اِس کی خُفیہ ایجنسیاں ملوث ہیں مگر ہم پاکستانی محض خطے میں امن کی آشاجیسے نیک اور پُرخلوص جذبوں کوپروان چڑھانے کے خاطربھارت کا نام لیناتک گوارہ نہیں کرتے ہیں کہ کہیں بھار ت ہماری اِن حقائق پر مبنی باتوں سے ناراض نہ ہوجائے اور اِس کے اِس روئے کی وجہ سے کہیں امن کی آشاکو ٹھیس نہ پہنچ جائے اورکہیں امن کی آشاکا نیک جذبہ یکطرفہ (صرف پاکستان کی جانب سے )ہی ہوکر نہ رہ جائے ہم چاہتے ہیں کہ اِس کارِ خیرمیں بھارت بھی اُسی طرح اپناحصہ ڈالے(اَب تک جو اپنے رویوں سے نہیں ڈال رہاہے )جس طرح ہم پاکستانی نیک نیتی سے ڈال رہے ہیں۔
مگرپاکستانیوں کے اِن نیک جذبوں کے برعکس بھارتیوں کی جانب سے روارکھے گئے روکھے پھیکے رویوں اور اِن کی عیاری و مکاری کی وجہ سے مجھے یہاں بڑے افسوس کے ساتھ یہ کہناپڑرہاہے کہ جیسے خطے میں امن کی آشاکی ضرورت صرف ہم پاکستانیوں کو ہی ہے اور پاکستان خطے میں امن کی آشاکے لئے کتنافکرمند ہے ..؟اِس کا اندازہ ساری دنیا کو ہے مگرلگتاہے کہ جیسے بھارتیوں کو اِس سے کوئی غرض نہیں ہے اورشایدیہی وجہ ہے کہ بھارتیوں کو پاکستان کی اِس سوچ و فکر میں ہماری کوئی کمزروی نظرآرہی ہے تب ہی اِنہوں نے بغیر کسی تحقیق کے گزشتہ دنوں بھارتی ریاست آندھراپردیش کے شہر حیدرآباد دکن میں ہونے والے بم دھماکو ں کا ذمہ دار پاکستان کو ٹھیرادیاہے اِس کی ایک مثال بھارتی جنتاپارٹی کے ایک جنونی انتہاپسندہندولیڈرایل کے ایڈوانی کی ہے اِس نے توپاکستان پر الزامات کی بارش کرنے کی حد ہی کردی ہے ایک موقع پر اِس نے صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے بے سوچے سمجھے حیدرآباددکن بم دھماکوں کا الزام پاکستان پر عائدکردیااور اِس بھارتی جنونی ہندو ایڈوانی نے نہ صرف یہ کہابلکہ موقع غنیمت جان کر جنونی ایڈوانی نے یہ بھی کہہ دیاکہ پاکستان بھارت کے خلاف درپردہ جنگ میں ملوث ہے اِس موقع پر ایڈوانی نے گزشتہ دہائیوں میں بھارت میں ہونے والی تمام دہشت گردی کے ڈانڈے پاکستان سے ملاتے ہوئے کہاکہ ہمسایہ ملک پاکستان پچھلی چنددہائیوں سے بھارت کے خلااف جنگ چھیڑنے میں کامیابی حاصل نہیں کرسکاتواِس لئے اَب اِس نے درپردہ اِس قسم کی جنگ شروع کردی ہے اور اِسی جنونی ہندؤرہنماایل کے ایڈوانی جویہ نہیں چاہتاکہ خطے میں پاکستان کی کوششوں سے امن کی آشاپروان چڑھے اِس نے اپنی ٹانگ اُونچی رکھتے ہوئے انتہائی مدبرانہ انداز سے یہ بھی کہہ دیاکہ ہمسایہ ملک بھارت کے لئے مشکلات پیداکرنے کے لئے دہشت گردی کا سہارالے رہاہے اور اِس ہی کے ساتھ ہی اِس انتہاپسندہندورہنمانے اپنے بھارتیوں کو اُکسانے کے خاطرپورے وثوق سے یہ تک کہہ دیاکہ اِس میں کوئی شک کہ حیدرآباددکن دھماکوں میں ہمسایہ ملک کا ہاتھ ہے بات صرف یہیں ختم نہیں ہوئی بلکہ دوسری طرف نااہل اور پاکستان کے خلاف منفی پروپیگنڈوں کا کوئی بھی موقع ہاتھ سے نہ جانے دینے والابھارتی میڈیابھی ہے جو حیدرآبادکے بم دھماکوں میں پیچھے نہیں رہااِس نے حسب روایت اِس مرتبہ بھی ایساہی کیامگراِس مرتبہ تو بھارتی میڈیانے بھی اپنی نااہلی اور باخبری کی حدکردی اوراپنی نااہلی کا ریکارڈ’’16جنوری کو کراچی میں مبینہ طورپر کالعدم تحریک طالبان کے ہاتھوں قتل کئے جانے والے ایم کیو ایم کے رُکن سندھ اسمبلی مقتول منظرامام کو دہشت گرد قرار دے کر‘‘خود ہی توڑدیاہے بھارتی میڈیاجو اپنے ملک کے جنونی اور انتہاپسند سیاستدانوں ، حکمرانوں اور عوام کی بھرپورعکاسی اور پاکستان کے خلاف زہراگلنے میں اپنا ثانی آپ ہے جب اِس نے حیدرآباددکن میں گزشتہ ہفتے ہونے والے دھماکوں کا ماسٹرمائنڈایم کیو ایم کے مقتول رُکن سندھ اسمبلی منظرامام کو قراردے دیاتو اِس کی قابلیت اور باخبرہونے کی قلعی بھی کھل گئی جومقتول منظرامام کی تصویردکھادکھاکر اورچیخ چیخ کر اپنے جنونی ہندؤ ں کو آگ بگولہ بناتارہااور اِنہیںیقین دلاتارہاکہ آندھراپردیش کے شہرحیدرآبادمیں حالیہ بم دھماکوں کی منصوبہ بندی اِس منظرامام نامی شخص نے کی تھی جو بھارت کی کئی ریاستوں کی پولیس کو مطلوب ہے بھارتی ٹی وی کی نااہلی اور اِس کا جنون یہیں ختم نہیں ہواجبکہ اِس کم ظرف اور نااہل بھارتی ٹی وی نے اِس کے ساتھ ہی یہ دعوی ٰ بھی کردیاکہ واقعے کے بعد ہماری بھارتی پولیس جو کارکردگی کے لحاظ سے ا مریکی اور برطانوی سمیت دنیاکی کسی بھی پولیس سے کم نہیں ہے اِس نے تُرنت منظرامام کی گرفتاری کے لئے کارروائیاں شروع کردی ہیں اور اِسی کے ساتھ ہی بھارتی ٹی وی نے یہ بھی دعویٰ کیاکہ ریاست جھاڑکھنڈ کی پولیس کے اعلیٰ افسران جو ملزمان کی فوری گرفتاری میں مہارت رکھتے دنیابھر میں مشہورہیں اُنہوں نے بھارتی حکمرانوں ، میڈیااور عوام سے کہاہے کہ ہم 22فروری کو حیدرآباددکن میں ہونے والے بم دھماکوں کے ماسٹرمائنڈمنظرامام کو تُرنت گرفتارکرکے بھارتی قوانین کے مطابق سزادلوائیں گے اور بھارتیوں کے خون کے ایک ایک قطرے کا حساب لیں گے‘‘ بھارتی میڈیاکا مقتول منظرامام جوسولہ جنوری کو ناحق دہشت گردوں کی کارروائی کا نشانہ بنے اور جہانِ فانی سے کوچ کرگئے اِنہیں حیدرآباد بم دھماکوں میں دہشت گرد ٹھیرائے جانے کا جھوٹادعویٰ کیا بھارتی میڈیاکی نااہلی اور خطے میں پاکستان کی امن کی آشاکی کوششوں کو سبوتاژکرنے کی کوشش نہیں ہے…؟ اور کیا بھارتیوں کا پاکستان دشمنی میں اِس حدکو پہنچ جانااِس قابل نہیں ہے کہ ہم بھی بھارتیوں کے اِس روئے کا جواب اِسی طرح دیںآج جس طرح بھارتی ہمارے نیک جذبوں کو اپنے پیروں تلے کچل کردے رہے ہیں…؟کیاہم پاکستانیوں کو یہ نہیں سوچناچاہئے کہ ایک ہم پاکستانی ہیں جو امن کی آشاکی رٹ لگاکر اپنی زبانیں گھس رہے ہیں …اوربھارت کی جانب سے مسلسل ناقابلِ برداشت لگائے جانے والے الزامات کے باوجود بھی ہم نے برداشت کا دامن اپنے ہاتھ سے نہیں چھوڑاہے اور بھارت کو خطے کا پسندیدہ ملک قراردینے کو بے قراررہیں جبکہ دوسری طرف کینہ پرور ی کا مسلسل مظاہر ہ کرنے والے بھارتی ہیں جواپنی آنکھوں پر پاکستانیوں سے نفرت کا پردہ چڑھاکر اور اپنی بغلوں میں خنجرچھپاکراور اپنے سینوں میں پاکستان سے متعلق نفرت کا لاوابھر کراپنااُلوسیدھاکرنے کی سوچ رکھے ہوئے ہیں آخرہمیں کب یہ سوچناہوگاکہ ہم کب تک اپنی مصالحت پسندی اور مفاہمتی پالیسی کے سہارے بھارت کی جی حضور ی کرتے رہیں گے اور بھارت ہماری اِسی جی حضوری کو ہماری کمزروی سمجھتے ہوئے ہمیں ساری دنیامیں ذلیل اور خوار کرتارہے گا …؟اَب اِس سارے منظر او پس منظرمیں میری رائے تو یہ ہے کہ بھارتی جنونی ہندؤرہنماایل کے ایڈوانی اور بھارتی میڈیاکی حیدرآباددکن کے بم دھماکوں میں پاکستان کو ملوث کرنے والے الزامات کے بعد کوئی چارہ نہیں رہ جاتاکہ ہم بھارت سے امن کی آشاکی ڈوریں بڑھائیں اوربھارت کو خطے کا پسندیدہ ملک قراردیں اگرپھر بھی ہم نے ایساکیا تو پھر کیا ہمیں یہ سمجھ لیناچاہئے کہ آج جو سوچیں اور رویئے جنونی بھارتی حکمران، سیاستدان، عوا م اور بھارتی میڈیا ہمارے متعلق رکھتے ہیں وہ سب ٹھیک ہیں …؟

note

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button