تازہ ترینعلاقائی

پشین:جنوبی پشتونخوا صوبے کی بحالی لازمی ہوچکی ہے،محمد عثمان کاکڑ

پشین ﴿ملک سعداللہ جان ترین ﴾ جنوبی پشتونخوا صوبے کی بحالی لازمی ہوچکی ہے جنوبی پشتونخوا کے تمام عوام کو زندگی کے ہر شعبے میں بدترین مشکلات اور مسائل کا سامنا کرناپڑرہا ہے ان پر تیسرے درجے کی زندگی گزارنے والے شہریوں کی ناقابل برداشت حالت مسلط کردی گئی ہے جس سے نجات کی خاطر مسلسل اور منظم جدوجہد کی سوا کوئی راستہ نہیں ان خیالات کا اظہار پشتونخوا میپ کے صوبائی صدرمحمد عثمان خان کاکڑ صوبائی سیکرٹری عبدالرحیم زیارتوال صوبائی ڈپٹی سیکرٹریز ڈاکٹر حامد خان اچکزئی سردار مصطفی خان ترین محمد عیسیٰ روشان اور حیات خان نے گزشتہ روز کلی پتا و بیانزئی میں عظیم الشان اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پشتونخوا میپ نے ہمیشہ پشتونخوا وطن کے تمام عوام کو درپیش مسائل و مشکلات کا بروقت ادراک کرتے ہوئے اسکے حل کیلئے بھر پور جدوجہد کی ہے اور حالیہ عوامی رابطہ مہم ان بنیادی مسائل کے حل کیلئے جدوجہد کرنا ہے جس سے جنوبی پشتونخوا کے تمام عوام کے زندگی کی پناہ و بقائ وابستہ ہے لہذا جنوبی پشتونخوا صوبے کی بحالی ،اس وقت تک پشتون بلوچ مشترکہ صوبے ہر شعبہ زندگی میں برابری عملی طور پر تسلیم کرنے ،چشمہ ڈیرہ اسماعیل خان سے براستہ ژوب نئی ٹرانسمیشن لائن پر فوری طور پر کام شروع کرنے ،جنوبی پشتونخوا میں زیر زمین پانی کی سطح بلند کرنے اور بارانی پانی کو محفوظ بنانے کیلئے چھوٹے بڑے ڈیموں کی تعمیر ،امن وامان کی صورتحال ہر سطح پر مکمل طور پر کنٹرول کرنے عوام کے سر ومال کو محفوظ بنانے ،اغوائ برائے تاوان ٹارگٹ کلنگ بھتہ خوری چوری ڈکیتی اور عوام دشمن کارروائیوں میں ملوث تمام عناصر کیخلاف بلاتفریق کارروائی کرنے ،کراچی اور کوئٹہ سمیت تمام ملک میں پشتونوں و ہزارہ عوام کے سرومال کی تحفظ کو یقینی بنانے ،کراچی میں دہشتگرد تنظیم ایم کیو ایم کی دہشتگردی کے خاتمے جیسے بنیادی نکات کی بنیاد پر متحد و منظم ہوکر تمام ملت کو قومی اتفاق اور اتحاد کی راہ کو اپنا کر میدان عمل میں نکلنا ہوگاانہوںنے کہا کہ موجودہ صوبائی مخلوط حکومت کی پشتون دشمن پالیسیوں اور اقدامات نے جنوبی پشتونخوا کے عوام کی زندگی اجیرن بنا کر رکھ دی ہے کیونکہ جو حکومت عوام کو سرومال کا تحفظ تک نہیں دے سکتی وہ عوام کی مسائل قطعاً حل نہیں کرسکتی بلکہ اس حکومت نے ہر شعبہ زندگی میں میرٹ پامال کرکے غریب عوام پر مہنگائی بے روزگاری مسلط کرکے اور تمام جنوبی پشتونخوامیں زراعت کی تباہی و بربادی کی ذمہ داری اُن پر عائد ہوتی ہے جبکہ ہمارے عوام کی مکمل اکثریت کی روز گار کا ذریعہ زراعت سے وابستہ ہے انہوں نے کہا کہ پشتونخوا میپ پشتونخوا وطن کے قومی مفادات کے تحفظ اور انکے عوام کو درپیش مسائل کے حل کیلئے جدوجہد جاری رکھے گی۔

یہ بھی پڑھیں  پشین: ہندو برادری کے دو خاتون سمیت تین افراد نے اسلام قبول کرلیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker