تازہ ترینعلاقائی

پشین: ترین قومی مومنٹ کے زیر اہتمام ریلی

پشین﴿ملک سعداللہ جان ترین﴾ترین قومی موومنٹ کے صوبائی صدر حیات اللہ خان ترین نے کہا کہ قوم پرستوں اور مذہبی جماعتوں نے ہمیشہ عوام کو مایوسی کے علاوہ کچھ نہیں دیا پشین میں بدامنی بربریت اور اغوائ برائے تاوان کی وارداتوں کے ذمہ دار نام نہاد مصنوعی جرگہ اور پشتونخوا میپ ہے بندوق کی نوق پر سیاست کرنیوالے ہم میں سے نہیں ہمسایہ ضلع کے لوگ پشین کے پرامن ماحول کو خراب کرنیکا خواب دیکھنا چھوڑ دیں ورنہ انہیں منہ کی کھانی پڑیگی یہ بات انہوں نے ترین قومی موومنٹ کی کال پر نکالی گئی پرامن موٹر سائیکل ریلی کے بعد علی زئی میں منعقدہ حاجی محمد علی زئی میں ایک اعظیم الشان جلسے سے خطاب کے دوران کیا جلسے سے محمود احمد تاج محمد ترین ملک عثمان ترین عبدالباقی ہیکلزئی شوکت بٹے زئی اور دیگر نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہا کہ کچھ عناصر پشین جیسے پرامن ضلع میں خون کی ہولی کھیلنے کا خواب دیکھ رہے ہیں جنھیں ترین قومی مومنٹ کے ہوتے ہوئے کسی صورت کامیابی نصیب نہیں ہوگی ٹی کیو ایم کی مقبولیت سے مخالفین کی نیندیں حرام ہوچکی ہے نام نہاد جرگے کا وجود میں آتے ہی پشین کا امن تباہ ہوا پشتونخوا میپ اور جمعیت علمائ اسلام دونوں عوام کے کسی درد کا دوا نہیں حالیہ انتخابات میں پشتونخو ا میپ کی بائیکاٹ سے پشتونوں کو کئی نقصان کرناپڑا ہم پر بے جا تنقید کرنیوالے اچھی طرح جان لیں کہ عوام باشعور ہوچکے ہیں اور آنیوالے انتخابات میں جیت ہماری ہوگی پشین میں سیاسی بنیادوں پر ایماندار آفیسرآن کے تبادے ناقابل برداشت ہے صوبائی وزیر پی ایچ ای نے علاقے کے عوام کو دغلی پالیسی سے لوٹ کر منافقت کی سیاست عوام پر چمکارہے ہیں قرآن اور اسلام کے نام پرجمعیت علمائ اسلام نے غیور مسلمانوں اور قوم پرستی کے نام پر پشتونخوا میپ نے لوگوں کو لوٹ لیا ہے انہوں نے کہا کہ پشین پر قبضے کی کسی کو اجازت نہیں دی جائیگی جھوٹے وعدوں اور کھوکھلے نعروں کا دور گزر گیا اب عملی جدوجہد سے عوامی مسائل کا خاتمہ کرنیوالے میدان میں اتر آئے ترین قومی موومنٹ عوام کی بلاتفریق خدمات پر یقین رکھتی ہے پشین کے امن کو ہر حال میں بچائینگے کابلی گاڑیوں میں اسلحے سے لیس افراد کی پشین میں مداخلت اور لوگوں کے زمینوں پر قبضے کی کسی کو اجازت نہیں دی جائیگی ہمیں نہ للکارہ جائے تو بہتر ہوگا ورنہ پشین بچاو کی خاطر کسی بھی قربانی دینے سے دریغ نہیں کرینگے۔۔۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker