تازہ ترینکھیل

پی سی بی کی ذوالقرنین کو 30 اگست کو پیش ہونے کی ہدایت

لاہور(نمائندہ سپورٹس) وکٹ کیپر ذوالقرنین حیدر کو کامران اکمل سے متعلق بیان بازی مہنگی پڑی ۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کی اینٹیگریٹی کمیٹی نے متنازعہ بیان دینے پرانہیں تیس اگست کو ثبوتوں کے ساتھ پیش ہونے کی ہدایت کردی۔ ذوالقرنین حیدر جب بھی بولتے ہیں پاکستان کے ساتھ اپنے لئے بھی مشکلات پیدا کرلیتے ہیں۔ اس بار بھی انہیں سوشل ویب سائڈ پر دیے گئے بیان کی سبب مشکلات کا سامنا ہے۔ چند دن قبل ذوالقرنین نے بیان دیا تھا کہ وکٹ کیپر کامران اکمل کو آئی سی سی کی جانب سے کلئیرئنس کے بغیر ہی ٹیم میں شامل کرلیا گیا ہے۔ پی سی بی نے اس بیان کا سخت نوٹس لیا اور انہیں تیس اگست کو اینٹیگریٹی کمیٹی کے سامنے پیش ہونے کا حکم دے دیا۔ پی سی بی کا کہنا ہے کہ اگر ذوالقرنین کے پاس میچ فکسنگ اور کامران اکمل کے حوالے سے کوئی ثبوت ہیں تو وہ پیش کریں اس پر کارووائی کی جائے گی۔ اور اگر وہ ایسا کرنے میں ناکام رہے تو وکٹ کیپر کو سخت اقدامات کا سامنا کرنے پڑے گا۔ دوسری جانب ذوالقرنین حیدر کا کہنا ہے کہ انہیں اس حوالے کوئی باضابطہ نوٹس نہیں ملا ۔ اے آر وائی نیوز سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ پی سی بی نے انہیں بلایا تو وہ تمام شواہد پیش کردیں گے ۔ ذوالقرنین حیدر نے کہا کہ ان وکیل نے انہیں میڈیا کے سامنے آنے سے منع کیا ہے

یہ بھی پڑھیں  کسی بھی بیرونی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا، عسکری قیادت کا عزم

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker