پاکستان

یونس حبیب کرپٹ ترین انسان ‘ اسی کے ذریعے ﴿ن﴾ لیگ پر الزام تراشی کی جارہی ہے‘ پرویزرشید

اسلام آباد ﴿بیورو رپورٹ﴾ مسلم لیگ ﴿ن﴾ سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ بلی جب بھی تھیلے سے باہر نکلے گی ہمارے ہاتھ اس کی گردن تک خود بخود پہنچ جائیں گے یونس حبیب ایک کرپٹ ترین انسان ہے اور اس کے ذریعے الزام تراشی کروائی جارہی ہے ن لیگ کو اصولی موقف سے ہٹانے کی کوشش کی جارہی ہے ہم جو بھی بات کریں گے ثبوتوں پر مبنی ہوں گے پیر صابر شاہ کی حکومت گرانے کے لئے بھی مہران بینک کا روپیہ استعمال ہوا چچا بھتیجے والا کھیل کھیل رہے ہیں پیر کے روز پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے سینیٹر پرویز رشید نے کہا کہ الزام تراشی کرنے سے پہلے ان لوگوں کو ثبوتوں پر زیادہ دھیان دینا چاہئے ہم جھوٹی الزام تراشی نہیں ثبوتوں کے ساتھ بات کرنے کے عادی ہیں پیپلزپارٹی کے حوالے سے 1988-90 ئ میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ صفدر عباس زیدی اور یونس عباسی نے پیپلزپارٹی کے اراکین کو بھاری رقوم تقسیم کی تھیں جب پیپلزپارٹی کی دوبارہ حکومت قائم ہوئی تو انہوں نے صفدر عباس زیدی کو چیئرمین بورڈ آف انویسٹمنٹ لگایا جس کا پیپلزپارٹی سے کوئی تعلق نہ تھا اگر پی پی کو ان سے شکایات تھیں اور ان کو اپنا مخالف گردانتے ہیں تو انہوں نے ان کو چیئرمین کیوں بنایا احسن میر کو چیئرمین بنکنگ کورٹ لگایا ہمارے اس وقت کے سیکرٹری اطلاعات مشاہد اﷲ سید نے پشاور میں پریس کانفرنس کرکے پی پی کے افسروں اور مہران بینک کے عہدیداران کی ساری ٹیپ کی ہوئی آواز سنائی تھی کہ صابر شاہ کی حکومت توڑنے کے لئے مہران بینک سے رقوم لی گئی تھیں جنرل اسد درانی جو کہ آئی ایس آئی کے چیف تھے نوکری سے فارغ ہوئے ہیں ان کو جرمنی میں سفیر لگایا اس عمل پر اگر ان لوگوں کے لئے پی پی کو کچھ فائدہ ہوا تو انہوں نے اس کو مراعات دے کر احسانات کا بدلہ چکایا آصف جمشید پنجاب میں مہران بینک کے چیئرمین تھے پی پی کی حکومت نے ان کی مدت ملازمت میں دو سال کی توسیع کی لیکن یہاں شہباز شریف نے آتے ہی ان کی توسیع ختم کرکے ان کو نوکری سے نکال دیا اس دور میں میاں منظور احمد وٹو ہمارے مخالف تھے انہوں نے ہمارے سارے کارکنان کو گرفتار کرایا اور جیلوں میں بھی بھیجا یہ شہباز شریف پر الزام لگاتے ہیں جنہوں نے اس کو نوکری سے فارغ کیا سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ اگر یہ سارے پی پی کے چہیتے نہ ہوتے تو ان کو کیوں سہولتیں دی جاتیں ہم کو جب بھی موقع ملتا ہے ہم تو ان کی نوکری کو ختم کو دیتے ہیں کیونکہ ہمارا ان کرداروں سے کوئی تعلق نہیں ہے یونس حبیب تو زرداری کو کہتا ہے یہ صرف چچا بھتیجے کا کھیل کھیلا جارہا ہے سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ جھوٹ کا کوئی پیر نہیں ہوتا ہے اب یہ آئی ایس آئی سے ہوتا ہوا یونس حبیب پر آگیا ہے فاروق لغاری نے بنجر زمین کروڑوں میں بیچی ان کے سیکرٹری جنرل نے بھی ان سے پیسے لئے فاروق لغاری نے کہا کہ میں تو ان کو نہیں جانتا ہوں اور ہم نے ان دونوں کی تصویر منظر عام پر لائی جو اس وقت کے پرنٹ میڈیا میں شائع ہوئی پی پی کا 1998 ئ سے مہران بینک کے ساتھ تعلق شروع ہوا اور وہاں سے 400 کروڑوں روپے کی رقم نکلوائی جس کی لسٹیں پی پی نے مہران بینک کو دیں اور قرضے جاری ہوئے اب یونس حبیب کہتا ہے کہ میں نے رقم شہباز شریف کو ٹی ٹی کی ہے ہم ان سے اس ٹی ٹی کا ثبوت مانگتے ہیں ہم عدالت میں مکمل ثبوتوں اور گواہوں کے ساتھ آئیں گے ن لیگ کو اپنے اصولی موقف سے ہٹانے کی سازش کی جارہی ہے جو جیل مقدمے بھی نہ ہٹا سکے تو یہ الزام تراشیوں سے کیسے ہٹیں گے ایک چور دوسرے چور کو بچانے کی کوشش کررہا ہے الزامات بے بنیاد اور جھوٹے ہیں اور ن لیگ ڈاکوئوں اور لٹیروں سے عوام کو نجات دلائے گی۔

یہ بھی پڑھیں  وزیراعظم عمران خان سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ملاقات

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker