پاکستانتازہ ترین

یکم جولائی سے پیٹرول چھ روپے فی لیٹر مہنگا ہونے کا امکان

اسلام آباد(بیوروچیف)  یکم جولائی سے پیٹرول چھ روپے فی لیٹر مہنگا ہونے کا امکان ہے۔سی این جی ایسوی ایشن نے چھ جون سے غیر معینہ مدت کے لیے ہڑتال کا اعلان کیا تو وزارت پیٹرولیم نے ممکنہ پیٹرول کی قلت سے نمٹنے کے لیے پی ایس او کو ہنگامی بنیادوں پر چار کروڑ پچھترلاکھ لیٹر پٹرول کا کارگو فوری طور پر درامد کرنے کا حکم دیا، جس کی پی ایس او نے ایک ارب اسی کروڑ روپے اضافی قیمت ادا کی۔ پیٹرول کی قیمت میں چھ روپے فی لیٹر اضافہ کی صورت میں یہ رقم عوام کو ہی ادا کرنا پڑے گی۔ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی اوسط قیمت چار اعشاریہ ساٹھ ڈالر فی بیرل کم ہونے کے باعث دیگر پیٹرولیم مصنوعات پانچ روپے ستر پیسے فی لیٹر تک سستی ہونے کا امکان ہے۔
ذرائع کے مطابق، یکم جولائی سے ہائی آکٹین پانچ روپے ستر پیسے فی لیٹر، ہائی سپیڈ ڈیزل دو روپے نوے پیسے ،لائٹ ڈیزل دو روپے پینتیس پیسے اور مٹی کا تیل تین روپے پچیس پیسے فی لیٹر سستا ہونیکا امکان ہے۔ اوگرا حکام کے مطابق، حکومت کو تیس جون کو پی ایس او کے درآمد کردہ مہنگے پیٹرول کی قیمت صارفین سے وصول نہ کرنے کی درخواست کی جائے گی۔ اگر وفاقی حکومت نے اوگرا کی درخواست قبول کرلی تو صارفین پیٹرول کی قیمت میں اضافے سے بچ جائیں گے۔ حکام کے مطابق، پیٹرول مصنوعات کی ترسیل کیلئے ان لینڈ فریٹ ایکولائزیشن چارجز طے کرنے کے بعد اوگرا پیٹرولیم مصنوعات کی حتمی قیمتوں کا تعین انتیس جون کو کرے گی۔

یہ بھی پڑھیں  مطالبات تسلیم نہ ہوئے تو20ویں ترمیم پراتفاق نہیں ہوگا،نواز شریف

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker