پاکستانتازہ ترین

حکومت نے پیٹرولیم پالیسی 2012 جاری کردی

اسلام آباد(بیوروچیف) حکومت نے پیٹرولیم پالیسی 2012 جاری کردی ہے۔ مشیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم حیسن نے رواں سال کے لئے نئی پیٹرولیم پالیسی کا اعلان کر تے ہوئے کہا ہے کہ پیٹرولیم اور قدرتی وسائل کے شعبے میں ابتدائی طور پرپندرہ کمپنیا ں دس کروڑ ڈالرکی نئی سرمایہ کاری کریں گی جبکہ بھارت سے تیل و گیس کی درآمد کا فیصلہ جلد متوقع ہے۔ موجودہ حکو مت کی جانب سے پیش کی جانے والی یہ دوسری پیٹرولیم پالیسی ہے۔۔پریس کانفرنس میں مشیر پیٹرولیم نےکہاکہ نئی سرمایہ کاری کے ساتھ ایکسپلوریشن کمپنیاں اپنی موجودہ پیداروار میں دس فی صد کا اضافہ کرتی ہیں تو ان کو نئے نرخ فراہم کر دئے جایئں گے۔ پہلی تین سمندری دریافتوں کو ایک ڈالر فی ایم ایم بی ٹی یو اضافی قیمت ادا کی جائے گی ۔گیس پرائس کی حد سو ڈالر سے بڑھا کر ایک سو دس ڈالر کردی گئی ہے۔اسی طرح خام تیل کی بینادی قیمت تیس ڈالر سے بڑھا کر چالیس ڈالر فی بیرل کر دی گئی ہے جس میں پچاس سینٹس کا سالانہ اضافے کیا جائے گا۔مشیر پیٹرولیم کا کہنا تھا کہ آئندہ سال کے وسط تک ملکی گیس کی پیداوار پانچ ارب مکعب کیوبک فٹ ہوجائیگی۔ جس سے سردیوں میں گیس کی لوڈشیڈنگ میں کمی آئے گی۔اُنہوں نے بتایا کہ سی این جی سیکٹر کے لئے گیس کی لوڈ شیڈنگ برقرار رہے گی۔

یہ بھی پڑھیں  گھوٹکی نو مسلم لڑکی اہل خا نہ دشمن ہو گئے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker