علاقائی

پھولنگر: پھولنگر کا مشہور میلہ ’’جماعتاں‘‘ شروع

بھائی پھیرو(نامہ نگار) بھائی پھیرو کا مشہور میلہ ” جماعتاں “شرو ع ۔ عقیدت مندوں کا ہزاروں افراد پر مشتمل قافلہ رنگ برنگے جھنڈے اُٹھائے سینکڑوں میل پیدل سفر کرتا جب بھائی پھیرو پہنچا تو ملتان روڈ پر تل دھرنے کی جگہ نہیں تھی ۔ جگہ جگہ ڈھول کی تھاپ پر رقص ، بچوں کو لوریاں اور چلتی پھرتی دکانوں پر گاہکوں کا رش ۔ تفصیلات کے مطابق صدیوں پہلے شروع ہونے والا روایتی میلہ جماعتاں کا ہزاروں افراد پر مشتمل قافلہ سینکڑوں میل پیدل سفر کرتے ہوئے بھائی پھیرو پہنچ گیا ۔ قافلہ میں شامل سینکڑوں افراد نے رنگ برنگے بڑے بڑے جھنڈے اُٹھا رکھے تھے اور ملنگوں کی ٹولیاں پاﺅں میں گھنگروں باندھے ڈھول کی تھاپ پہ رقص کر رہی تھی ۔ جب کہ لوریاں دینے والے سارنگی کی تان پر بچوں کو اٹھا کر لوریاں دے کر ویلیں وصول کر رہے تھے ۔ ملتان روڈ پر کئی کلو میٹر تک انسانوں کے سر ہی سر نظر آرہے تھے ، شہر میں ملتان روڈ کے دونوں اطراف مٹھائی اور دیگر ضروریات زندگی سستی اور عارضی دکانیں سجائی گئی تھی ۔ بچے ، بوڑھے ، نوجوان اور خواتین رنگ برنگے لباس پہنے میلے میں شامل ہو رہے تھے ۔ روایت ہے کہ یہ میلہ صدیوں پہلے شروع ہوا اور اس کے قافلے سینکڑوں میل دور ضلع گجرات سے پیدل چل کر کئی دنوں کی مسافت کے بعد راستے میں ہر پندرہ میل کے پڑاﺅ کرتے ہوئے ضلع اُوکاڑہ کے قصبہ شیر گڑھ کے دربار بابا داﺅد بندگی تک پہنچتے ہیں جہاں پر یہ میلہ تین دن تک جاری رہتا ہے ، وہاں عقیدت مند نعت خوانی ، قوالیوں ، دھمالوں اور رقص کے ذریعے دربار پر اپنی عقیدت کا اظہار کرتے ہیں ۔ اور اس میلے میں لاکھوں کی تعداد میں لوگ شامل ہوتے ہیں ۔ بھائی پھیرو میں یہ قافلہ رات کو قیام کرتا ہے جہاں پر درس بابا شیر بہادر کے جانشین قافلے میں شامل ہزاروں افراد کو لنگر کھلاتے ہیں ۔ رات بھر کھیل تماشا کرنے والے گوئےے اور گلوکار گانا گا کر لوگوں کا دل بہلاتے ہیں اور صبح ہوتے ہی یہ قافلہ اگلی منزل کی طرف روانہ ہو جاتا ہے

یہ بھی پڑھیں  نیپرا نےبجلی کی قیمتوں میں ایک روپے 34 پیسے فی یونٹ اضافہ کردیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker