تازہ ترینعلاقائی

سیرکو جانے والے 6 دوستوں نے معمولی جھگڑے پر اپنے ہی دوست کو قتل کرنے کیلیے اٹھا کر بڑی نہر میں زبردستی پھینک دیا

بھائی پھیرو(نامہ نگار) سیر کو جانے والے چھ دوستوں نے معمولی جھگڑے پر اپنے ہی دوست کو قتل کرنے کیلیے اٹھا کر بڑی نہر میں زبردستی پھینک دیا۔ دریائے راوی میں ڈوب کر ہلاک ہہونے والے نوجوان کی لاش چار روز بعد مل گئی۔ سرائے مغل پولیس نے مقدمہ درج کرکے لاش پوسٹ مارٹم کیلیے بھیج دی ۔تفصیلا ت کے مطابق عید کے بعد ٹرو کے دن نواحی گاؤں بونگہ بلوچا ں کے آٹھ دوست ٹریکٹر پر سوار ہوکر ہیڈ بلوکی پر سیر کے لئے آئے اور بڑی نہربی ایس لنک کے کنارے ڈیرے ڈال لیے۔ اسی اثناء میں محمد زمان ولد اللہ رکھا تیز لہروں کی نزر ہو کر گہرے پانی میں ڈوب کرہلاک ہو گیا ۔وقوعہ کا سن کر مقامی پولیس اورریسکیو 1122کے غوطہ خور موقع پر پہنچ گئے اور لاش کی تلاش شروع کر دی ۔متوفی کے ورثا بھی نہر کنارے آکر بیٹھ گئے اور اور کئی روز تک نہر کے چلتے پانی میں نظریں گاڑے اپنے پیارے کی لاش تلاش کرتے رہتے ۔چار روز بعد گزشتہ روز لاش خود بخود تیر کر اسی جگہ پانی کے اوپر آگئی اور سرائے مغل پولیس نے تحویل میں لیکر پوسٹ مارٹم کیلیے نزدیکی ہسپتال روانہ کر دی ۔متوفی کے والد اللہ رکھا کی رپورٹ پر تھانہ سرائے مغل میں درج ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ معمولی جھگڑے پر ملزمان اللہ دتہ،ارشاد،عرفان،اختر،اور رانا ذیشان،عامر ورثا نے مقتول زمان کو نہر میں پھینک کر ہلاک کردیا۔مقامی پولیس نے نوجوان کے مرنے کی اصل وجوہات جاننے کیلیے مقدمہ درج کرکے مزیدقانونی کاروائی شروع کر دی ہے

یہ بھی پڑھیں  بھائی پھیرو: متحدہ مجلس عمل کی کال پر جمعتہ المبارک کو سینکڑوں مساجد میں یوم تحفظ ختم نبوت منایا گیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker