علاقائی

پھولنگر:خوبرو خاکروبہ کو چھیڑچھاڑ کرنے کی مزاحمت کرنے پر اُوباش نوجوان نے لڑکی کے کپڑے پھاڑ دیئے

پھول نگر﴿نامہ نگار﴾ خوبرو خاکروبہ کو چھیڑچھاڑ کرنے کی مزاحمت کرنے پر اُوباش نوجوان نے لڑکی کے کپڑے پھاڑ دیئے،بالوں سے گھسیٹا اور بازو توڑ دیا۔ڈاکٹری نتیجہ نہ ملنے پر سینکڑوں خاکروبوں کا سول ہسپتال کے باہر روڈ بلاک کر کے کئی گھنٹے احتجاجی مظاہرہ،ٹریفک کی لمبی قطاریں ۔روزانہ اُوباش نوجوان ہمیں تنگ کرتے ہیں مگر انتظامیہ کچھ نہیں کرتی مظاہرین کا واویلا۔تفصیلات کے مطابق بلدیہ بھائی پھیرو کی خوبرو خاکروب نازیہ بی بی حسب معمول مسجد انوارِ غوثیہ کے قریب جھاڑو دے رہی تھی کہ اُوباش نوجوان فیصل نے اُس سے چھیڑ چھاڑ شروع کر دی منع کرنے پراُوباش لڑکے نے نازیہ سے کھینچا تانی شروع کر دی ،بالوں سے گھسیٹاجس سے اُس کے کپڑے پھٹ گئے اور وہ نیم برہنہ ہو گئی اور اُس کا ایک بازو ٹوٹ گیا۔لڑکی کا ڈاکٹری نتیجہ لینے کے لیے جب اُس کے لواحقین سول ہسپتال بھائی پھیرو پہنچے تو ڈاکٹروں نے نتیجہ دینے سے انکار کر دیا جس پرمشتعل ہو کر بلدیہ کی سینکڑوں خواتین اور مرد خاکروبوں نے سول ہسپتال کے سامنے ٹائر جلا کر ملتان روڈ جام کر دیا اور غنڈا گردی اور ڈاکٹروں کے خلاف زبردست نعرہ بازی اور سینہ کوبی شروع کر دی پولیس کے آنے پر بھی مظاہرین نے کئی گھنٹے احتجاج جاری رکھا جس سے شہر کے اندر ٹریفک کی لمبی لائینیں لگ گئیں ، مظاہرین کی لیڈروں نرگس اوراکبری نے ہاتھوں میں جھاڑوں لہرا لہرا کر واویلا اور سینہ کوبی کی کہ جب تک سپیکر پنجاب اسمبلی اُن کی بات نہیں سنے گا وہ ٹریفک نہیں کھولیں گی۔ان رہنمائوں نے بتایا کہ خاکروبوں کو آئے روز شہر کے اُوباش نوجوان سرے عام تنگ کرتے ہیں مگر انتظامیہ اس پر کوئی ایکشن نہیں لیتی ۔بالآخر ایس ایچ او تھانہ سٹی بھائی پھیرو سردار امجد ڈوگر نے مقدمہ درج کر کے ملزم گرفتار کرلیا اور مظاہرین نے ٹرفک کھو دی ۔سول ہسپتال کہ میڈیکل آفیسر محمد رفیق بھٹی نے بتایا کہ خاتون کا میڈیکل خاتون ڈاکٹر کرنے کی مجاز ہے اور ہسپتال میںنتیجہ دینے کی مجاز خاتون ڈاکٹر موجود نہیں ہے ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker