علاقائی

پھولنگر:پولیس نےخونی ڈکیٹی میں ہلاک ہونے والے نامعلوم ڈاکوکاسراغ لگالیا

بھائی پھیرو﴿نامہ نگار﴾بھائی پھیرو سٹی پولیس نے گذشتہ روز ہونے والی خونی ڈکیٹی میں ہلاک ہونے والے نا معلوم ڈاکو کا سراغ لگا لیا ۔ ڈاکو تحصیل قصور کا رہائشی اور قتل کے مقدمہ میں ملوث تھااور چند روز قبل ہی جیل سے رہا ہو کر آیا تھا ۔ماں نے ہلاک شدہ ڈاکو کی نعش وصول کر لی ۔زخمی تاجر کی حالت نازک۔باپ کی رپورٹ پر تین ڈاکوئوں کے خلاف مقدمہ درج ۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز ملتان روڈ بھائی پھیرو کے طیب جنرل سٹور پر ڈکیتی کے دوران ہلاک ہونے والے نا معلوم ڈاکو کی شناخت مقامی پولیس نے کر لی ۔ ڈاکو کی جیب سے ملنے والے موبائل فونوں کے ڈیٹا کو ایس ایچ او بھائی پھیرو سردار امجد ڈوگر نے ٹریس کیا اور نا معلوم ڈاکو کی شناخت کر لی ۔ نامعلوم ڈاکو کا نام راشد ڈوگر بتایا جاتا ہے اور وہ تحصیل قصورکی نواحی آبادی سہاری روڈ محلہ صابری کا رہائشی بتایا جاتاہے ۔ ڈاکو ایک قتل کے مقدمہ میں کئی سال جیل کے اندر رہا اور چند روز قبل ہی جیل سے رہا ہو کر باہر آ یا تو آتے ہی اُس نے ایک ڈکیٹ گینگ تشکیل دے کر ڈاکے مارنا شروع کر دئیے ۔ بتایا جاتا ہے کہ مرنے والے ڈاکو کے دو بھائی اب بھی قتل کے مقدمہ میں جیل کے اندر بند ہیں۔ڈاکو کی لاش کو تھانہ سٹی سے اسکی ماں فیض الہی بی بی زوجہ محمد عمر نے وصول کر لیا اور تدفین کیلیے اپنے آبائی گائوں لے گئی۔ دوسری طرف زخمی ہونے والے بھائی پھیرو کے تاجر شیخ طاہر کی حالت جناح ہسپتال لاہور میں نازک بتائی جاتی ہے اور ڈاکٹر اُس کی جان بچانے کے لئے سر توڑ کوشش کر رہے ہیں ۔ واقعہ کی تفتیش ڈی پی او قصور سید خرم علی شاہ بخاری اپنی زیر نگرانی کر رہے ہیں اور ڈی ایس پی پتوکی محمد اکرام خان اور مقامی پولیس تفتیش کی لمحہ بہ لمحہ رپورٹ افسران بالا کو پہنچا رہی ہے ۔ ۔ با وثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ پولیس نے مرنے والے ڈاکو کے دو ساتھی ڈاکوئوں کے نام بھی معلوم کر لئے ہیں مگر تفتیشی نقطہ نظر سے ان ناموں کو صیغہ راز میں رکھا جا رہا ہے ۔ باپ عبدالطیف کی درخواست پر تین نامعلوم ڈاکوئوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker