پاکستانتازہ ترین

پی آئی اے کرپشن کیس کی سماعت ، سیکریٹری دفاع پیش

piaاسلام آباد(بیورو رپورٹ) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس افتخار محمد چوہدری نے ریمارکس دئیے ہیں کہ سیکریٹری دفاع چیئرمین پی آئی اے نہیں بن سکتے، پی آئی اے کا سربراہ خود مختار ہونا چاہیے۔انہوں نے یہ ریمارکس پیر کے روز پی آئی اے کرپشن کیس کی سماعت کے دوران دئیے ،چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سر براہی میں تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ سپریم کورٹ کے طلب کرنے پر سیکریٹری دفاع آصف یاسین ملک بھی عدالت میں پیش ہو ئے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ چیئرمین پی آئی اے ایڈیشنل سیکریٹری دفاع کو جوابدہ ہے اگر سیکریٹری دفاع چیئرمین ہو گا تو اپنے ہی ماتحت کو کیسے جوابدہ ہو گا۔ جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ ایک وقت تھا کہ پی آئی اے قومی پرچم بردار سروس تھی اب تو وہ کبھی کبھی پرچم بھی مٹا دیتے ہیں۔ اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کہ وہ تو پی آئی اے کو بہت اچھی ائرلائن تصور کرتے ہیں۔ اس معاملے کو اپنے ذاتی تجربات سے علیحدہ رکھ کر دیکھا جائے۔ کیس کی مزید سماعت 24جنوری کو ہو گی۔

یہ بھی پڑھیں  مسجدا لحرام میں وائے فائے انٹرنیٹ اوربلیو ٹوتھ کی سہولت مہیا کردی گئی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker