تازہ ترینعلاقائی

پشین: 178سیاسی سماجی شخصیات کا پشتونخوا میپ میں شمولیت کا اعلان

پشین(بیوروچیف /ملک سعداللہ ترین)پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے صوبائی ڈپٹی سیکرٹریوں حاجی سردار مصطفی خان ترین ڈاکٹر حامد خان اچکزئی محمد عیسیٰ روشان اور موسیٰ خان و ملک منظور خان اچکزئی نے کہا کہ زندگی کے ہر شعبے میں مسائل ومشکلات سے نجات اور ترقی و خوشحالی کے حصول کے لئے قومی پارٹی وطن دوست عوام دوست سیاست اور مسلسل جدوجہد کے بغیر کوئی چارہ کار نہیں پشتونخوا وطن کے غیور عوام نے اپنے قومی حقوق و اختیارات کے حصول اور قومی مفادات کے تحفظ کیلئے متحد ومنظم ہوکر قومی اتحاد واتفاق کی راہ اپنانی ہوگی وہ عوامی رابطہ مہم کے سلسلے میں کلی نالئی میں جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے جس میں مختلف دیہات سے 178سیاسی سماجی شخصیات کارکنوں اور جوانوں نے مختلف پارٹیوں سے مستعفی ہوکر پشتونخوا میپ میں شمولیت کا اعلان کیا اس سے پہلے پارٹی کارکنوں نے جلوس کی شکل میں پارٹی رہنماوں کا زبردست استقبال کیا مقررین نے کہا کہ پشتونخوامیپ نے روز اول سے وطن دوست عوام دوست اور اصولی سیاست کی راہ پر کاربند رہ کر ہر امر حکمران کیخلاف محکوم قوموں اور مظلوم عوام کے حقوق واختیارات کے حصول کیلئے قربانیوں سے لبریز جدوجہد کی ہے اور اس راہ میں کسی قربانی سے دریغ نہیں کیا ہے پشتونخوا میپ نے خان شہید عبدالصمد خان اچکزئی کی قیادت میں فرنگی استعمار سے آزادی اور عوام کو ووٹ کا حق دلانے ملک میں حقیقی جمہوریت کا قیام پارلیمنٹ کی بالادستی قانون کی حکمرانی عدلیہ کی ازادی قوموں کی برابری پشتونخوا وطن کی ملی وحدت و ملی تشخص کی بحالی جنوبی پشتونخوا صوبے کے قیام عبوری دور کیلئے مشترکہ پشتون بلوچ صوبے میں دونوں قوموں کی برابری عملاًتسلیم کرانے و انصاف پر مبنی معاشرے کی قیام اور زندگی کے ہر شعبے میں عوام کو درپیش مشکلات و مسائل کی بروقت نشاندہی اور انہیں حل کرنے کیلئے تاریخ ساز جدوجہد کی ہے اور آج اس تمام علاقے میں قومی دلیری اور سیاسی بیداری کی لہر پشتونخوا میپ انکے اکابرین رہنماوں اور کارکنوں کی جدوجہد کا ثمر ہے انہوں نے کہا کہ موجودہ مخلوط صوبائی حکومت عوام کے سر ومال کے تحٖظ سمیت زندگی کے ہع شعبے میں عوام کی بنیادی مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکا ہے پشتونخوا میپ نے گزشتہ چار سالوں سے جدوجہد کرتے ہوئے واضح کیا تھاکہ مشترکہ پشتون بلوچ صوبے میں اغواء برائے تاوان ٹارگٹ کلنگ بھتہ خوری چوری ڈکیتی گاڑیوں موٹرسائیکلوں کے چھیننے کے واقعات فرقہ واریت دہشتگردی سمیت سرکاری تعلیمی اداروں ہسپتالوں کی زبوں حالی زراعت کی بربادی سالاسال سے جاری بجلی کی لوڈشیڈنگ پینے کے صاف پانی تک کی عدم دستیابی بدترین بے روزگاری مہنگائی میرٹ کی پامالی کرپشن وکمیشن کا عروج اور ہر شعبہ زندگی سمیت ہر سرکاری محکمے کی بوسیدہ حالت اور انارکی موجودہ حکومت اور انکے مختلف اداروں کی عوام دشمن پالیسیوں وعوام دشمن اقدامات کا نتیجہ اور تحفہ ہے جسکی تصدیق اب سپریم کورٹ نے اپنے فیصلوں میں بھی کردیا ہے انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی مخلوط حکومت اور انکے وزراء کی فوج ظفر موج کے مزید اقتدار میں رہنے کا کوئی اخلاقی جواز باقی نہیں رہا وفاقی حکومتی اتحاد نے سپریم کورٹ کے فیصلوں پر عملدرآمد کرتے ہوئے موجودہ صوبائی مخلوط حکومت کیخلاف پوری اقدامات کرنے ہونگے کیونکہ موجودہ صوبائی حکومت کی عوام کے سرومال کے تحفظ کی اولین ترین ذمہ داری میں ناکامی اور تاریخ کی بدترین کرپشن ولوٹمار ہر فورم پر ثابت ہوکر نوشتہ دیوار بن چکا ہے انہوں نے کہا کہ پشتونخوا وطن کے غیور عوام موجودہ حکومتوں کے عوام دشمن پالیسیوں و اقدامات کی بنیاد پر ان کے کھڑے احتساب کیلئے متحد ومنظم ہوکر جدوجہد تیز کریں۔

یہ بھی پڑھیں  استعفیٰ کے علاوہ عمران کے تمام مطالبات جائز ہیں، قمر زمان کائرہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker