پاکستانتازہ ترین

توہین آمیز فلم کے خلاف پرتشدد احتجاج، 14 جاں بحق

اسلام آباد(بیورو رپورٹٰ ) ملک بھر میں توہین آمیز فلم کے خلاف شہریوں کا پرتشدد احتجاج، پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں،مشتعل افراد نے املاک کو نذر آتش کردیا۔ فائرنگ ، پرتشدد واقعات اور مظاہروں میں دوپولیس اہلکار وں سمیت چودہ افراد جاں بحق اور دیڑھ سو سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔توہین آمیز فلم کے خلاف پشاور میں بھی پرتشدد احتجاج کیا گیا۔ جلاؤ گھیراؤ اور فائرنگ سے نجی ٹی وی کے ٹیم ممبرعامر شہید سمیت چارافراد جاں بحق اور نو پولیس اہلکاروں سمیت پینتالیس زخمی ہو گئے ۔ مظاہرین نے سینما اورچیمبرآف کامرس کی عمارت اور چار گاڑیوں کو آگ لگادی ۔کراچی میں امریکی توہین آمیز فلم کے خلاف مختلف مذہبی ، سیاسی جماعتوں کی جانب سے احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں اور شہر کے مختلف علاقوں سے امریکن قونصلیٹ کی جانب جانے کی کوشش کی پولیس کی جانب سے امریکن قونصلیٹ کی جانب جانے والے راستوں پر رکاوٹیں کھڑی کرکے مظاہرین کو روکنے کی کوشش کی گئی تاہم مشعل مظاہرین رکاوٹیں عبور کرکے امریکن قونصلیٹ کی طرف بڑھے تو مشتعل مظاہرین اور پولیس میں جھڑپیں ہوئی۔ پولیس کی جانب سے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے شیلنگ ، لاٹھی چارج اور ہوائی فائرنگ بھی کی گئی۔بعض مقامات پر مشتعل مظاہرین اور پولیس کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوانیٹی جیٹی کے قریب مظاہرین اور پولیس کے درمیان فائرنگ کے نتیجے میں پولیس اہلکار طفیل جاں بحق جبکہ دو پولیس اہلکاروں سمیت چار افراد زخمی ہوئے۔ سپرہائی وے پر بھی فائرنگ سے پولیس اہلکار عامر حسین جان کی بازی ہار گیا،پی آئی بی اور ملیر ندی سے دو افراد کی لاشیں ملی ہیں جن کو فائرنگ کرکے قتل کیا گیا تھا، کورنگی مہران ٹاون میں مسلح افراد نے محمد خان نامی نوجوان کو گولیاں مارکر قتل کردیا،گلشن پٹیل اسپتال اور نیو کراچی ایوب گوٹھ میں فائرنگ سے دو افراد زخمی ہوئے ،اسٹیل ٹاون کے قریب بھی مسلح افراد کی فائرنگ سے دو افراد زخمی ہوئے، لیاقت آباد میں سندھی ہوٹل کے قریب سے ایک شخص کا سر اور پاوں ملے ۔اسپتال ذرائع کے مطابق شاہ لطیف ٹاؤن میں فائرنگ سے زخمی ہونے والے دو افراد نے اسپتال میں دم توڑ گیا۔ امریکن قونصلیٹ کے قریب فائرنگ سے زخمی ہونیوالے ایک شخص نے دم توڑ دیا۔ مجموعی طور پر چھ سول ، پانچ جناح اور تین عباسی شہید اسپتال لائی گئی۔ مشتعل افراد نے پانچ بینک ،تین سینما گھر ، دوپولیس چوکی ، تین پولیس موبائل سمیت چھ گاڑیوں کو نذر آتش کردیا جبکہ متعدد دفاتر میں بھی توڑ پھوڑ کی اور بھاری نقصان پہنچایا۔مشتعل افراد کی جانب سے فائربریگیڈ عملے کو کام کرنے نہیں دیا پریڈی تھانے کی حدود میں فائربریگیڈ کے عملے کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا تاہم آتشزدگی والے کسی بھی مقام پر فائربریگیڈ عملہ نہ پہنچ سکا۔

یہ بھی پڑھیں  اگست 2014ء لوٹ آیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker