پاکستانتازہ ترین

لاڑکانہ جلسہ بڑا تھا یا چھوٹا،پی پی لیڈرز آپس میں الجھ پڑے

کراچی(مانیٹرنگ سیل) پاکستان تحریک انصاف نے لاڑکانہ میں جلسہ کیا کر ڈالا، پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنماؤں کی راتوں کی نیند اڑ گئیں، کوئی حقیقت پسندی سے کام لینے لگا تو کوئی حقیقت جھٹلا کر، غرض لاڑکانہ جلسے پر خود پاکستان پیپلزپارٹی کے رہ نما آپس میں لڑ پڑے۔ کتنے آدمی تھے، کرسیاں کتنی لگائی گئیں، جلسے میں آنے والے لوگ کتنے تھے، پی ٹی آئی نے لاڑکانہ میں جلسہ کیا کیا، گویا سوالات کا ایک طوفان برپا ہوگیا، سندھ میں پی پی قیادت نے جلسے سے متعلق الگ اعداد و شمار پیش کیے تو پنجاب میں پیپلزپارٹی کی قیادت جلسے کے گن گاتی نظر آئی، نجی ٹی وی نے اعتزاز احسن کی لاڑکانہ جلسے کو بڑا جلسہ قرار دینے کی خبر کیا نشر کی، گویا پی پی قیادت اور رہنماؤں کے مابین بھونچال آگیا۔  ایک نجی ٹی وی  سے گفت گو میں سعید غنی کا کہنا تھا کہ عمران خان کے جلسے ميں 10 سے 12 ہزار لوگ تھے، اعتزازاحسن نے ہوسکتا ہے کہ اخبارات کی تصویریں دیکھ کر بیان دیا، گویا سعید غنی پی ٹی آئی کی حقیقت ماننے سے اس حد تک انکاری ہیں کہ اپنے ہی پارٹی کے رہنما کی بات کو نفی کرگئے، سعید غنی نے صرف اسی پر بس نہ کیا، کپتان کی کامیاب لاڑکانہ اننگ کے جواب میں باؤنسر پھیکنے کی کوشش میں کہنے لگے کہ  عمران خان لاڑکانہ میں پنڈال کو 40فٹ تک مکمل نہیں کرسکے، ہوسکتا ہے اعتزاز احسن 12،10ہزار لوگوں کو بڑا سمجھتے ہو، اور اپنی بات پر قائم رہتے ہوئے سعیدغنی نے ایک بار پھر کہا کہ لاڑکانہ میں تحریک انصاف کا جلسہ بڑا نہیں تھا۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ : ٹریفک پولیس کا اہلکار دسویں محرم کو دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker