پاکستانتازہ ترین

پنجاب اسمبلی میدان جنگ، عوامی نمائندگان میں کرسیاں چل گئیں

لاہور(نامہ نگار)  پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں آج حکومتی اور اپوزیشن ارکان نے کل کے ڈرامے کا پارٹ ٹو ریلیز کیا، دوسرے شو کی کامیابی کے بعد انعام کے طور پر اسپیکر نے حکومتی رکن شیخ علاوٴالدین اورمسلم لیگ ق کی رکن سیمل کامران کی موجودہ سیشن تک کیلئے رکنیت معطل کر دی۔ آج پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں ڈرامے کا آغاز وہیں سے ہوا، جہاں کل ختم ہوا تھا، عوامی نمائندوں کی جھجک اس قدر ختم ہو چکی ہے کہ مردوخواتین میں تمیزکرنا مشکل ہے، ایوان میں فری اسٹائل دھکے دیکھے گئے اور ایک رکن نے دوسرے کا گریبان پکڑ لیا۔ ایوان میں اسپیکر رانا محمد اقبال کی اوئے اوئے کی آوازیں گونجتیں رہیں، تاہم اسپیکر کی آواز سننے کو کوئی تیار نہ ہوا۔ شدید ہنگامہ آرائی میں حکومتی اور اپوزیشن ارکان ایوان میں جمع رہے اور بدترین بد نظمی دیکھی گئی۔ ہنگامہ آرائی کی وجہ سے اسمبلی کا اجلاس 15منٹ کیلئے ملتوی کر دیا گیا۔ اسی دوران مسلم لیگ ن کی خواتین ارکان پنجاب اسمبلی بھی لڑائی میں کود پڑیں اور اپوزیشن ارکان سے ہاتھاپائی تک نوبت جا پہنچی۔ اس موقع پر اپوزیشن ارکان ایوان میں کھڑے ہوگئے اور حکومت کیخلا ف نعرے بازی جاری رہی۔ لڑائی کے دوران مسلم لیگ ن کے ایم پی ایراناارشد نے ثمینہ خاورحیات پر حملے کئے کرسی اٹھالی۔ اسپیکررانامحمداقبال نے شیخ علاوٴالدین اورسیمل کامران کوموجودہ اجلاس تک معطل کردیا

یہ بھی پڑھیں  امریکی صدارتی انتخابات میں مسلم ووٹرزکی اہمیت۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker