پاکستانتازہ ترین

پنجاب بجٹ‘مالی سال2013-14 میں ترقیاتی کاموں کے لیے 2کھرب90ارب روپے مختص

budgetلاہور(نمائندہ خصوصی)حکومت پنجاب کے بجٹ برائے مالی سال2013-14 میں ترقیاتی کاموں کے لیے 2کھرب90ارب روپے مختص کیئے گئے ہیں‘ مالی سال2013-14 کے دوران حکومت کا فوکس زیادہ تر انرجی سیکٹر کی جانب ہو گا اورساڑھے12ایکڑ تک کی زمین کے حامل کاشتکاروں کو ٹیوب ویلز چلانے کے لئے شمسی توانائی کے پلانٹس فراہم کرنے، نہری نظام پر چھوٹے ہائیڈرل پلانٹس کی تنصیب اور سستی بجلی کی پیداوار حکومتی ترجیحات کے تحت ترقیاتی بجٹ کا حصہ ہیں۔تو سولر ٹیوب ویل پر حکومت نے ساڑھے7 ارب روپے سبسڈی کی مد میں،رکھے ہیں۔جبکہ جنوبی پنجاب میں خصوصی پروگرامز کی مد میں بھی 5ارب روپے کے فنڈز مختص کئے گئے ہیں۔ بجٹ دستاویزات کے مطابق آئندہ مالی سال کے لئے تیار کیا گیا ترقیاتی بجٹ’’بلاک ایلوکیشن‘‘ فارمولے کے تحت تیار کیا گیا ہے۔ جس میں سکیم ٹوسکیم فنڈز مختص کرنے کی بجائے ایک بلاک میں متعدد سکیمیں بنا کر اس کے لئے بلاک وائز فنڈز رکھے گئے ہیں۔ اس فارمولے کے تحت وزیر اعلی پنجاب کی پیشگی اجازت کے بعد کسی بھی ترقیاتی سکیم کی رقم بوقت ضرورت دوسرے بلاک میں موجودمنصوبے کے لئے بآسانی ٹرانسفر کی جا سکے گی‘ مالی سال2013-14 کے مجموعی ترقیاتی بجٹ میں سے 1کھرب3ارب روپے پہلے سے جاری ترقیاتی منصوبوں، 1کھرب20 ارب نئے ترقیاتی پروگرامز، 17ارب روپے ضلعی حکومتوں کے ترقیاتی منصوبوں کے لئے رکھے گئے ہیں جبکہ 40ارب روپے کی خطیر رقم متفرق منصوبوں کی مد میں رکھی گئی ہے‘مالی سال 2013-14 کے دوران سکولز ایجو کیشن کی ترقیاتی سکیموں کے لئے17ارب روپے، ہائیر ایجوکیشن کی ترقیاتی سکیموں کے لئے ساڑھے8ارب روپے، سپیشل ایجوکیشن کی ترقیاتی سکیموں کے لئے1ارب20کروڑ روپے، لٹریسی اینڈ نان فارمل بیسک ایجوکیشن کی ترقیاتی سکیموں کے لئے1ارب90کروڑ روپے، سپورٹس کی ترقیاتی سکیموں کے لئے 2ارب20کروڑ روپے، محکمہ صحت کی ترقیاتی سکیموں کے لئے19ارب روپے، صوبہ بھر کی واٹر سپلائی سکیموں کے لئے 10ارب روپے، ریجنل پلا ننگ کے لئے16ارب روپے، محکمہ بلدیات کی ترقیاتی سکیموں کے لئے1ارب70کروڑ روپے، صوبہ بھر کی شاہرات کے لئے 33 ارب روپے، محکمہ اریگیشن کی ترقیاتی سکیموں کے لئے23ارب روپے، صوبہ بھر میں عوامی عمارتوں کی تعمیر کی مد میں10ارب روپے، پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ کی ترقیاتی سکیموں کے لئے 5ارب روپے ،انرجی سیکٹر کے لئے 20ارب روپے، اربن ڈویلپمنٹ کے لئے 5ارب روپے، محکمہ زراعت کی ترقیاتی سکیموں کے لئے5ارب روپے، محکمہ خوراک کی ترقیاتی سکیموں کے لئے20ارب روپے، لائیو سٹاک اینڈ ڈیری ڈویلپمنٹ کی ترقیاتی سکیموں کے لئے1ارب70کروڑ روپے، انڈسٹریز ڈیپارٹمنٹ کی ترقیاتی سکیموں کے لئے5ارب20کروڑ روپے، انفارمیشن ٹیکنالوجی کی ترقیاتی سکیموں کے لئے5ارب روپے، ٹرانسپورٹ پنجاب کی ترقیاتی سکیموں کے لئے6ارب30کروڑ روپے مختص کئیگئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button