تازہ ترینکالمملک ساجد اعوان

قوم کے رکھوالے

آج میں صبح سویرے فیصل آباد ٹول پلازہ پر گیا کیونکہ میرے کچھ مہمان آرہے تھے میں تقریباً 5:30پر موٹروے ٹول پلازہ پر پہنچ کر مہمانوں
کا انتظار کرنے لگا موٹروے سے اترتے ہی سرگودھا روڈ شروع ہوجاتاہے دائیں طرف فیصل آباد شہر اور بائیں طرف چنیوٹ کو سڑک نکلتی ہے دونوں طرف پولیس کی چیک پوسٹ ہے میں ایک سائیڈ پر بیٹھا پولیس کی کارروائی دیکھ رہا تھا ہرطرح کی گاڑیاں گزررہی تھیں پولیس والے صرف اور صرف موٹرسائیکل کو روک رہے تھے اور کسی کو چیک نہیں کیا جارہاتھا اس چیک پوسٹ کو بنانے کامقصد کیا ہے میرے خیال میں کچھ نہیں بڑی بڑی گاڑیوں میں سفرکرنے والے کیا فرشتے ہوتے ہیں کیاگاڑی اور پیسہ ہی سب کچھ ہے ایسا ہی ہے جب تک ہماری پولیس ٹھیک نہیں ہوسکتی اس وقت تک ہم ذلیل ہوتے رہے گے۔ایک موٹرسائیکل والا جونہ جانے کسی کام سے آرہا ہو یا جارہاہو اس کو باقاعدہ چیک کیاجاتاہے صرف اور صرف اتنا بتایاجائے کہ پولیس کا محکمہ کس لئے ہے میر ااپنا ہنڈ اموٹرسائیکل 31.03.2012کو میرے گھر کے سامنے سے چوری ہوااور آج 18.07.2012تین چار ماہ گزرگئے پولیس کو رپورٹ درج کروانے کے باوجود ابھی تک کوئی سراغ نہیں ملا جو پولیس اطلاع دینے کے باوجود ایک گھنٹے کے بعد آئے گی چوروں کو تو دور نکلنے میں بھی آسانی ہوجاتی ہے ہم جائیں تو جائیں کہاں اگر سروے کیا جائے تو زیادتی ہورہی ہے اور صرف اور صرف غریب عوام کے ساتھ ۔کب تک ہم اس طرح تماشا بنتے رہیں گے ہمارے پولیس والوں کو چاہیئے کہ جس مقصد کے لئے انہوں نے نوکری کی ہے اپنے فرائض کو دیانت داری سے ادا کریں اور جرائم کرنے والوں کوختم کردیں اور ہر طرف امن وسکون ہو۔اگر ہم لوگ اپنی ڈیوٹیاں دیانت داری سے سرانجام دیں تو ہر محکمے میں کرپشن ختم ہوجائے ہر بندہ حرام کی بجائے حلال کمائے اور اپنے خزانے بھرنے کی بجائے عوام کی فلاح وبہبود پر خرچ کریں تو کیا کچھ نہیں ہوسکتا ہمیں اپنے آپ کو ٹھیک کرنا ہوگا ۔پاکستان کے لاکھوں نہیں بلکہ کروڑوں پا کستانی انصاف کے نظام کو دیکھنا چا ہتے ہیں کیا ہی اچھا ہو گا کہ جو لوگ اس نظام کے لئے مسئلہ ہیں انکو فارغ کر دیا جائے اور جو لوگ اس فیلڈ کے اہل ہیں ان کو مو قع دیا جائے تا کہ ملک کے اندر پو لیس کے نظام میں بہتری آ سکے یہ ایک اٹل حقیقت ہے جو ملک ترقی کے منازل طے کر ہے ہیں انکا نظام پولیس او ر نظام انصاف قابل تعریف ہے

یہ بھی پڑھیں  سراج الحق کی دھمکی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker