پاکستانتازہ ترین

کوئٹہ دھماکے: دھرنا جاری، تدفین نہیں کی گئی

quetta-protestکوئٹہ(مانیٹرنگ سیل) پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں جمعرات کو سنوکر کلب پر ہونے والے بم حملوں میں شیعہ افراد کی ہلاکت پر ہزارہ برادری کا احتجاج ہفتے کو بھی جاری ہے اور تدفین نہیں کی گئی ہے۔واضح رہے کہ جمعرات کو کوئٹہ میں ایک سنوکر کلب کے اندر پہلے خودکش حملہ اور اس کے بعد باہر کھڑی گاڑی میں دھماکے کے نتیجے میں چوراسی افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ان دو دھماکوں میں ہلاک ہونے والوں کی بڑی تعداد شیعہ مسلک سے تعلق رکھنے والوں کی تھی۔جمعہ کو بلوچستان شیعہ کونسل نےسنوکر کلب حملوں میں ہلاک ہونے والے افراد کی تدفین سے انکار کردیا تھا اور دھرنے کا اعلان کیا تھا۔ان کا مطالبہ تھا کہ کوئٹہ کو فوج کے حوالے کرنے تک شیعہ افراد کی تدفین نہیں کی جائے گی اور احتجاج جاری رہے گا۔ہمارے نامہ نگار کے مطابق علمدار روڈ پر ہزارہ برادری سے تعلق رکھنے والوں کی بڑی تعداد دھرنے میں شامل ہے۔اس دھرنے سے شیعہ مسلک کے علماء خطاب کر رہے ہیں اور اپنے مطالبات دہرا رہے ہیں۔ یہ دھرنا نہایت سردی کے باوجود بھی اب تک جاری ہے اور کوئٹہ میں رات کو درجہ حرارت منفی چار ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ جاتا ہے۔ سنیچر کی صبح مظاہرین نے علمدار روڈ سے آئی جی پولیس کے دفتر تک مارچ کیا اور دفتر کے سامنے دھرنا دیا۔بلوچستان کے سیکرٹری داخلہ اکبر حسین درانی کا کہنا ہے کہ حکام کی مظاہرین سے بات چیت کا سلسلہ جمعہ کی رات سے جاری ہے اور اس میں جلد کامیابی کا امکان ہے جس کے بعد لاشوں کی تدفین ہو سکے گی۔ پاکستان کے وزیر اعظم کے دفتر سے جمعہ اور سنیچر کی درمیانی شب کو ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے بلوچستان حکومت کی درخواست پر ایف سی کو حکم دیا ہے کہ وہ بلوچستان کے سول انتظامیہ کی مدد کرے۔ بیان کے مطابق ایف سی کو پولیس کے مکمل اختیارات حاصل ہوں گے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم نے بلوچستان کے وزیراعلیٰ نواب اسلم رئیسانی کو بیرون ملک کا دورہ منسوخ کرکے جلد ملک واپس پہنچنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔ وزیر اعظم نے ہر ہلاک ہونے والے کے لواحقین کے لیے دس لاکھ اور ہر زخمی ہونے والے کے لیے ایک لاکھ روپے کے امدادی رقم کا اعلان بھی کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ : کاشتکاروں کو دھان کی باقیات کو محفوظ انداز سے تلف کرنے کے لئے حکومتی سطح پر جو مشینری فراہم کی جا رہی ہے . ڈپٹی ڈسٹر کٹ آفیسر زرعی انجینئر نگ محمد کاشف ڈوگر

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker