تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ:ریلوے اسٹیشن پر گندگی کے ڈھیر،بنچ ٹوٹ پھوٹ کا شکار

اوکاڑہ (نمائندہ خصوصی) ٹوٹے بنچ ،پینے کے صاف پانی کی عدم فراہمی ،باتھ روموں کو تالے،پلیٹ فارم پر جا بجا گندگی کے ڈھیر،ویٹنگ روم ملازمین کی عارضی رہائش گاہوں میں تبدیل،کینٹینوں پر باسی کھانے ،ریلوے پولیس چوکی کی ہڈحرامی ،ریزرویشن آفس میں ٹاؤٹوں کے ڈیرے،ملازمین کی اپنے گھروں میں ہی دفتری حاضری،لوہے کے سامان کی روز بروز چوری،بکنگ آفس میں کرپشن ہی کرپشن !جی ہاں یہ ہے ریلوے اسٹیشن اوکاڑہ۔جہاں سرکاری رٹ نام کی کوئی چیز دکھائی ہی نہیں دیتی خاکروب ہر ماہ محکمہ ریلوے سے تنخواہیں تو وصول کرتے ہیں لیکن اپنی ڈیوٹی کم ہی اداکرنے آتے ہیں ۔ریلوے چوکی ملازمین کی مبینہ ملی بھگت سے یہاں جرائم پیشہ لوگ ہمہ وقت گھومتے دکھائی دیتے ہیں۔ویٹنگ رومز کو اکثر تالے لگے دکھائی دیتے ہیں یا ملازمین اور ان کے دوستوں کے لیے ہی کھلتے ہیں اسٹیشن پر پینے کے پانی کی بھی عدم دستیابی کی وجہ سے بھی مسافروں کو سخت دشواری رہتی ہے ۔رات کے وقت پانی ٹینکی میں بھرا جاتا ہے لیکن ٹینکی لیک ہونے اور ٹوٹیاں چوری ہو جانے کی وجہ سے دن کے اوقات میں پانی کم ہی دستیاب ہو تا ہے ۔ریلوے اسٹیشن کے اندر بنائے جانے والے باتھ روموں کی حالت انتہائی خراب ہو چکی ہے ۔لیکن کوئی اپنی ذمہ داری لینے کو تیار نہیں ریلوے کے افسران اور ملازمین کو ملنے والے کوارٹروں میں سے اکثر نے اپنے کوارٹر کرایہ پر دے رکھے ہیں اور ہر ماہ بھاری رقم لے کر خود ہڑپ کر جاتے ہیں ۔ریلوے بکنگ کلرک بھی عرصہ دراز سے ایک ہی جگہ تعینات ہے ۔ عملہ کی دیدہ دلیری کی شکایت کرنے والوں کو چوکی پولیس کی معاونت سے ڈرا دھمکا کے چپ کروا دیا جاتا ہے ۔پولیس کی ملازمین اپنے آپ کو خدا سمجھ کر فیصلے صادر کرتے ہیں مسافروں کے بیٹھنے کے لیے کوئی سایہ دار جگہ نہ ہے بنچ بھی ٹوٹے ہوئے ہیں ۔یوں ریلوے اسٹیشن آثار قدیمہ کا منظر پیش کرتا دکھائی دیتا ہے ۔پلیٹ فارم نمبر ا کا برآمدہ بھی بوسیدہ ہونے کی وجہ سے خار دار تاروں سے بند کر دیا گیا ہے جو کے کسی بھی وقت گر سکتا ہے ۔ان حالات میں ریلوے اسٹیشن مسائلستان بن کر رہ گیا ہے ۔شہریوں نے وزیر ریلوے غلام احمد بلور سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اسٹیشن ماسٹر سرور شاہد کے مطابق بارہا اعلی حکام کواوکاڑہ ریلوے اسٹیشن کے مسائل کے متعلق بتایا گیا ہے لیکن فنڈز نہ ہونے کی وجہ سے مسائل جوں کے توں ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں  پاکستان نے ویسٹ انڈیز کیخلاف ون ڈے اسکواڈ کا اعلان کر دیا

یہ بھی پڑھیے :

3 Comments

  1. ٭سر: واقعی ریلوے اسٹیشن اوکاڑہ گندگی کا ایک مرکز بن چکا ہے اور قدیم کھنڈرات کی مانند دکھائی دیتا ہے کرسیاں نہ ہونے کی وجہ سے مسافروں کو جگہ جگہ کپڑے بچھا کر ٹرینوں کا گھنٹوں انتظار کرنا پڑتا ہے انتظامیہ کو اسٹیشن کی حالت درس کرنے کے لیے جلد از جلد فنڈز جاری ہونے چاہیں تاکہ اسٹیشن کی حالت درست ہو سکے٭ 

  2. hmare moulk mai tu sare astations ki ye he halat h astationo k sath sath traino ki behtri k lye b funds jari hone chaye.train ek shahi swari h jis se matwasst tabqa faida outhta h wo private buso pe safar krne k dues aford nhe kr sakte *

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker