تازہ ترینکالم

ریت کے گھر بناؤ ابھی ،،،،

sohail warsiریت کے کیمپ بنا کر مشق کر نے والے ، کہا وت ، بے وقوف بھیڑ یں اپنے قصا ئی خو د چنتی ہیں ،،، شاعر کی ایک لائن
کل کے پچھتا وے کو بھی امکان میں رکھنا
حملے ہوا اڑی میں اور آ وازیں بلند شر وع ہو ئیں کہ ، پا کستان کے انتک وادی شامل ہیں لہذا اس کے خلا ف کا روئی کی جا ئےء اور تو اور حکو مت سے اجا زت ما نگنے کا شوشا بھی چھو ڑا گیا کہ ہم نے پڑوسی پر حملہ کر نا ، دیا ر غیر میں جب جنگ کا سنا تو اپنے ٹی وی چینل کو چھو ڑ کر سو چا ذرا اس ملک کی میڈ یا نیوز سنتے ہیں کہ وہ اپنے ہاں بیٹھ کر کیا کچھ بو ل رہے ہیں ، نیو ز انیکر نے خبر یں شر وع کیں اور ہیڈ لائن تھی کہ پا کستان باز نہیں آ یا لہذا ہما ری حکو مت نے فیصلہ کیا کہ اب کی بار نظر انداز نہیں کر یں گے اور جو ہتھیا ر استعما ل کر رہے ہیں ان کے ساتھ مزاکرات کیسے ہو سکتے ہیں اس لیے وار روم میں افو اج کے بڑے افسران کے ساتھ وزیر اعظم مو دی دو گھنٹے رہے اور بر یفنگ دی گئی کہ ہم پا کستان کے ٹھکا نوں کو کیسے تبا ہ کر سکتے ہیں اس کے لیے وزیر اعظم مو دی کے سا منے ایک ٹیبل رکھا گیا جس میں ریت سے بنے پا کستا نی کیمپوں کے نمو نے رکھے گے اور بتا یا گیا کہ ان کو ہم کیسے تبا ہ کر سکتے ہیں ۔لو جی یہ نیو ز سنے کے بعدہنسی ہی نہیں رک رہی تھی کہ وہ ملک جو خو د ایٹمی پا ور اور کسی دوسرے ایٹمی پا ور والے ملک کے ساتھ جنگ کی پلا ننگ کر رہا جس کے آ گے امر یکہ کی چا لیں فیل ہیں ، پلا ننگ ہو رہی ہیں اپنے سا منے میز پر ریت کے کیمپ بنا کر ، جب پا ک فو ج کے بارے سنا اور دیکھا کہ یہ وطن عز یز کے دشمن کو کیسا جو اب دے رہے ہیں تو بہت سکون ملا کہ ملک کی بڑی سٹر کیں ٹر یفک سے روک کہ ہما رے شا ہین پر وا زے بھر رہے ہیں ایک تصو یر دیکھی جس میں چا ر لا ئنوں میں پا ک فضا ئیہ کے لڑا کا طیا رے کھڑے ہیں ، ایک علا قے میں بارہ گھنٹے سے زیا دہ لڑ اکا طیا رے پر وازیں کر تے مشقیں کر تے رہیں ، دوسر ی جا نب ایک ٹیبل اور ریت کے کیمپ ، کیمپ کی جگہ اس بار ریت کے محل لکھ دیتا ہو ں ، ہما رے نو جو انوں کے بو ٹو ں کے ساتھ گرد کی ریت تم کے ٹیبل پر پڑ ھی ریت سے زیا دہ ہو گی ، جنگ کی تیا ری کر رہے تھے ؟۔ جنگ تو جنوں ،دل گردے سے لڑئی جا تی ہے ، تن من قر بان کیا جا تا ہے ، ہما را خیال تم کی عوام نے نیو ز چلنے کے بعد اس ریت کے روم میں ٹیبل پر لا نے کے خر چ کا بھی حساب ما نگا ہو گا تب ہی اتنے ہی خر چ کی مشق کی ، ہما رے ہاں ایک صا حب جو اپنے ملک سے دور رہ کر خبر یں بہت شو ق سے سنتے ہیں ، انہوں نے جب ٹی وی پر دیکھا کہ ہما رے طیا رے کیسے قطار در قطار اور اڑان بھر رہے ہیں تو وہ صا حب چھا تی تان کر بو لرہے تھے کہ یہ بھا رت ہم سے کیا جنگ کر ئے گا ابھی تو اس نے کچھ الفا ط بو لے اور ہما رے طیا روں کی گر ج اس کے لیے بہت ہو گی اور پا ک فوج پو رے ملک کا پیسہ ہما ری کما ئی اس گر ج پر خر چ کر دے تو ہم اف بھی نہیں کر یں گے ، حقیقت ، ایسا جذ بہ ، ولو لہ ، جو ش ، ہم ہر پا کستا نی میں مو جو د ہے، اس بار نہیں بہت بار اس عوام کو آ زما یا جا چکا ہے ،
بھا رت کے اپنے سیا ست دان کہہ رہے ہیں کہ پا کستان کے ساتھ جنگ کا سو چنا ہما ری بے وقو فی ہو گی ، روس چین نے جب ساتھ نبھا نے کا بیان دیا تو بھا ر ت اور ہی ٹھنڈا ہو گیا ، جب امر یکہ کی طر ف دیکھا تو وہاں ہما رے وز یر اعظم اس بار ایسے بو لے کہ بھا رت بے چار ہ اپنے عز یز ملک سے کہہ رہا ہو گا کہ اس کے ساتھ ہما رے جنگ کر وا کر مر وانا ہے جو تمہا ری سر زمین پر آ کر ہمیں ہی آ نکھیں دیکھا رہا ہے ۔
جو لو گ ، یا کچھ سیا ست دان اس با ت پر ہیں کہ وز یراعظم نے اقو ام متحد ہ میں کشمیر کے ایشو پر اپنا مو اقف واضع نہیں کیا ان سے گز ارش کر وں گا کہ وہ بھا رتی نیو ز سن لیں جس میں وہ چیخ چیخ کر کہہ رہے ہیں کہ پا کستان کے وزیر اعظم نے اپنی با ئیس منٹ کی تقر یر میں آ ٹھ منٹ کشمیر پر با ت کی اور کشمیر کے مجا ئد ین کے سپر کما نڈو بن کر بو لے جا رہے تھے۔
اب ہم میں یہ بحث کی جا رہی ہے کہ کیوں مزا کرات کا کہا گیا ، مزا کرات کا ٹھیک کہا گیا ، اگر وہ کر تے ہیں تو ٹھیک ورنہ وہ تو کیا پو ری دنیا دیکھ چکی کہ ہماری فو ج کی تیا ری کسی بھی حملے کی صورت میں کیسی وہ صرف دو دن میں وا ضع ہو چکا ، پھر جو منٖفی پہلو بنا رہے ان سے درخو است کے وطن عز یز کی عز ت پر کو ئی با ت کر ئے تو آپ اپنی سیاسی دوکان کو تالا ہی لگا کر رکھیں ،
بھارت کی جا نب سے کہا جا رہا کہ اب ہم بھی اقوا م متحدہ کے اجلا س میں اسی لیو ل کا بو لیں گے جیسے پا کستا ن کی طر ف سے انداز اپنا یا گیا ، زیا دہ سے زیا دہ کیا بو لا جا ئے گا کہ اڑی حملے میں پا کستان کی سر زمین استعمال کی گئی ، اگر ایسا تو ہما ری جا نب سے کہا جا چکا کے ثبو ت فراہم کیے جا ئیں اگر بغیر ثبو توں کے الز ام لگا یا جا رہا تو با قی دنیا سمجھ جا ئے کہ بھا رت کشمیر میں اپنے کیے گے ظلم کو چھپا نے کے لیے پو ری دنیا کی میڈیا کی تو جہ کشمیر سے ہٹا کر ایک دوسرے ایشو کی جا نب مر کو ز کروانا چا ہ رہاہے۔
ایک سوال یہ بھی اور حقیقت بھی کہ بھا رت کی سات لا کھ فو ج کشمیر کے علا قے میں اس کی مو جو دگی میں کو ئی سر زمین استعما ل کر جا ئے تو وہ فو ج ہما ری پا ک فو ج کا کیا مقا بلہ کر ئے گی ،بھارت جنگی ما خول اس لیے بنا کر رکھنا چا ہتا کہ پا کستان میں چین جن پر وجیکٹ پر کام کر رہا ان میں رکا وٹ آ ئے تو چین کے ساتھ ہما رے جو تعلقات ہیں ان سے پو ری دنیا کو پیغا م ملتا ہے کہ چین ہر مشکل وقت میں پا کستان کا ساتھ دیتا آ یا ہے ، پھر بھا رت کی خام خیا لی ہی ہو ئی ، ریت کے کیمپ بنا کر مشق کر نے والے ، کہا وت ، بے وقوف بھیڑ یں اپنے قصا ئی خو د چنتی ہیں ،،، شاعر کی ایک لائن
کل کے پچھتا وے کو بھی امکان میں رکھنا

note

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker