تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:سستے بازاروں میں ناقص اشیاء خوردونوش کی فروخت سے عوام کو لوٹاجارہا ہے

ramzan bazarبھائی پھیرو(نامہ نگار) سستے بازاروں میں ناقص اشیاء خوردونوش کی فروخت سے عوام کو لوٹاجارہا ہے۔ناجائز منافع خورفعال جبکہ پرائس کنٹرول کمیٹیاں عملاً غیر فعال ہوچکی ہیں۔انتظامیہ رمضان المبارک میں عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں بری طرح ناکام ہوچکے ہیں۔بھائی پھیرو جماعت اسلامی کے امیر ڈاکٹر داؤد پرویز مغلنے کہا ہے کہ سحری،افطاری اور تروایح میں لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔بجلی کی غیر اعلانیہ بندش سے روزہ داروں کو عبادت میں مشکلات کا سامنا ہے۔ماہ مقدس میں عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے حکومتی دعوے سراسر غلط ثابت ہورہے ہیں۔اشیاء خوردونوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں۔بلاشبہ حکمران رمضان المبارک میں18کروڑ عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں بری طرح ناکام ہوچکے ہیں۔انہوں نے کہاکہ سستے بازار ناقص اشیاء کا مرکز اور یوٹیلٹی سٹورز لاکھوں کی آبادی کی ضروریات پوری کرنے سے قاصرہیں۔ناجائز منافع خوراور ذخیرہ اندوز لوگوں سے مرضی کی قیمتیں وصول کرکے دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں۔درجہ دوئم کی اشیاء اول درجہ کے نرخوں میں فروخت کی جارہی ہیں۔بازاروں میں پھلوں،سبزیوں اور آٹے کی قلت نے سستے رمضان بازاروں کی افادیت کوختم کردیا ہے۔انہوں نے کہاکہ انتظامیہ کی عدم توجہی کے باعث صارفین کو شدید پریشانی کاسامناہے۔انتظامیہ کی جانب سے کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے عوام کی سہولت کے لئے سستے رمضان بازار تولگادیے ہیں,سرکاری ملازمین کی فوج ظفر موج وہاں تعینات ہے،سرکاری خزانہ سے کروڑوں روپے خرچ کرنے کے باوجود عوام سستی چیزوں کو ترس گئے ہیں ۔ مگر ان بازاروں میں اشیاء خوردونوش کا معیار قائم کرنے کے ساتھ قیمتوں کوعام مارکیٹ سے آدھی قیمت پر رکھنے کے لئے اقدامات نہیں کیے۔پرائس کنٹرول کمیٹیوں کو فعال بنانے کی ضرورت ہے لیکن وہ صرف خانہ پوری کررہی ہیں۔سستی صاف ستھری اشیاء خوردونوش کاحصول عوام کے لئے خواب بن گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button