تازہ ترینعلاقائی

ساہیوال : بگڑے رئیسوں کا محنت کش کی بیٹی سے گینگ ریپ

ساہیوال (بیو رو رپورٹ)بگڑے رئیسوں کا محنت کش کی بیٹی سے گینگ ریپ ‘اوباش نوجوانوں نے قریبی گاؤں کی دوشیزہ کو اغواء کرنے کیلئے اپنی بہن کی مدد حاصل کی ‘دس روز تک اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناتے رہے‘پولیس بااثر ملزموں کی سرپرست بن گئی ‘صلح کیلئے مظلوم لڑکی اوراس کے اہلخانہ پر دباؤ‘عدالت کے حکم پر مقدمہ درج۔تفصیلات کے نواحی گاؤں ٹھٹھہ آرائیاں کے رہائشی محنت کش اللہ دتہ نے بتایا کہ وہ دوائی لینے نورشاہ گیا ہواتھاجبکہ اس کی شادی شدہ جواں سال بیٹی گھر میں اکیلی تھی۔اسی روز ملزم آصف نے اپنی بہن کی مدد سے اس کی بیٹی کو بدھ بازارسامان خریدنے کیلئے کیلئے گھرسے باہربلوایا اورراستہ میں اسلحہ کے زور پر زبردستی سفید کار میں دیگرساتھیوں امجد دلمیروغیرہ کی مدد سے اغواء کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا۔متاثرہ لڑکی فرزانہ نے بتایا کہ آصف ،امجد دلمیر اور2نامعلوم لڑکے اس کے ساتھ10دن تک باری باری زنا حرام کاری کرتے رہے اور جان سے ماردینے اورجسم پر تیزاب پھینکنے کی دھمکیاں دیتے اس کا کہنا تھا کہ ملزمان اسے فروخت کرنے جارہے تھے راستہ میں گاڑی خراب ہوگئی اورملزم آصف اپنا موبائل فون چارج کرنے پٹرول پمپ پر چلاگیا جبکہ میں نے پولیس کو دیکھ کر شورمچاناشروع کردیا جس پر پٹرولنگ پولیس نے مجھے اورآصف وغیرہ کو پکڑ کر تھانہ شیخ فاضل پولیس کے حوالہ کردیا جبکہ دونامعلوم ملزم پہلے ہی جاچکے تھے۔تھانہ شیخ فاضل کے اے ایس آئی احمد دین نے بتایا کہ انہوں نے لڑکی کوملزمان کے چنگل سے بازیاب کرواکر زاہد سلیم علاقہ مجسٹریٹ بوریوالا کی عدالت میں پیش کیا اورعدالت نے لڑکی والدین کے حوالے کردی متاثرہ خاندان کا کہنا ہے کہ ملزمان با اثر ہیں جو زورو زبر دستی سے صلح کے لئے مجبور کر رہے ہیں انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب ‘چیف جسٹس آف لاہورہائی کورٹ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں  لندن: آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کا آغاز کل سے ہوگا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker