پاکستانتازہ ترین

راولپنڈی :انتخابات کے سوا کوئی راستہ نہیں،عمران خان

راولپنڈی 20جون﴿بابرشہزاد چیمہ﴾پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے سابق وزیر اعظم گیلانی کی نااہلی کو آئین اور قانون کی جیت قرار دیتے ہوئے پوری قوم کو مبارکباد دی ہے ۔ انہوں نے فیصلے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا کہ جس عدلیہ کیلئے قوم دو مرتبہ سڑکوں پر آئی اس نے آئین اور قانون کی بالادستی قائم کر کے اپنا فرض ادا کر دیا۔ میمو گیٹ اسکینڈل پر ملکی تاریخ کا طاقتور ترین جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا گیا ، کمیشن کی رپورٹ میں خوفناک انکشافات ہیں ، حقانی پر ملکی مفادات کے خلاف سازش ثابت ہو چکی ہے اب دیکھنا یہ ہے کہ زرداری کا اس میں کیا کردار ہے ۔ رپورٹ منظر عام پر لائی جائے ۔ آج پارٹی کے مرکزی سیکرٹریٹ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ وہ ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی اور لوڈ شیڈنگ کے خلاف27جون سے ملک گیر احتجاج کرینگے۔ اس مقصد کیلئے انہوں نے اپنے مجوزہ غیر ملکی دورے کو منسوخ کرنے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ 22جون کو حیدر آباد میں ہونے والا سونامی جلسہ آخری جلسہ ہوگااس کے بعد 27جون کو فیصل آباد سے احتجاجی مظاہروں کا سلسسلہ شروع ہوگا۔ وہ خود تمام شہروں اور دیہی علاقوں میں احتجاجی مظاہروںکی قیادت خودکرینگے۔ عمران خان نے کہا موجودہ کرپٹ اور نااہل حکومت نے ساڑھے چارسالوں میں عوام کے مسائل میں بے پناہ اضافہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں کے ٹیوب ویل اور فیکٹریاں بند ہو چکی ہیں جس سے غذائی بحران اور بے روزگاری میں خوفناک اضافہ ہو چکا ہے ۔ ان تمام بحرانوں کا واحد حل فوری اور شفاف انتخابات ہیں ہمیں سپریم کورٹ سے پوری امید ہے کہ وہ غیر جانبدار نگران حکومت کے قیام کیلئے اقدام کریں۔ ہمیں موجودہ حکومت سے غیر جانبدار انتخابات کی قطعی توقع نہیں۔ ہم ممکنہ حکومتی دھاندلی سے نمٹنے کیلئے حکمت عملی ترتیب دے رہے ہیں ۔ حالات چاہے کچھ بھی ہوں ہم ہر صورت انتخابات میں حصہ لینگے۔ ایک سوال کے جواب میں عمران خان نے کہا کہ اسٹیٹس کو کی حامی کسی بھی جماعت سے تحریک انصاف کے انتخابی اتحاد کا کوئی امکان نہیں ۔ ہم تبدیلی کیلئے جدوجہد کر رہے ہیں تاکہ اس ملک سے احتساب ، ٹیکس، تعلیم اور پولیس، پٹواری کا نظام بدلا جا سکے ۔ مسلم لیگ ’’ن‘‘ اور تحریک انصاف کا ایجنڈا یکسر مختلف ہے ۔ ’’ن‘‘لیگ کی ساری جدوجہد ایک مرتبہ پھر باری لگانے کی ہے ۔ وہ گذشتہ ساڑھے چار سالوں سے پنجاب میں اقتدار میں ہیں، لیکن عوام کے مسائل حل کرنے اور نظام بدلنے میں بری طرح ناکام رہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ مرکز اور پنجاب برسر اقتدار جماعتوں کے قائدین کا پیسہ غیر ملکی بینکوں میں پڑا ہے ، جن کے اثاثے بیرون ملک ہوں وہ عوام کے ساتھ کیسے مخلص ہو سکتے ہیں ۔ انہوں نے گرتی ہوئی معیشت کا ذکرکرتے ہوئے کہا کہ روپے کی قدر میں ایک روپے کی کمی سے قوم 80ارب روپے کی مزید مقروض ہو جاتی ہے ۔ جبکہ نام نہاد لیڈروں کی بیرون ملک پڑی ہوئی رقم میں از خود اضافہ ہو تا جاتا ہے ۔  عمران خان نے کہا کہ اسپیکر رولنگ کے خلاف رٹ پٹیشن تحریک انصاف کے چیئرمین اور پوری پارٹی کی طرف سے دائر کی گئی جبکہ ’’ن‘‘ لیگ کے ایک ایم این اے اور ایک سینٹر نے انفرادی حیثیت سے رٹ پٹیشن دائر کی ۔ عمران خان نے کہا کہ تحریک انصاف کے پارٹی انتخابات ان کی پہلی ترجیح ہے ان انتخابات کا ہر صورت انعقاد کیا جائیگا۔ یہ کسی بھی جماعت کے اندر شفاف انداز میں ہونے والے مثالی انتخابات ہونگے۔ اس مقصد کیلئے میڈیا کے نمائندگان کو باقاعدہ مانیٹرنگ کی دعوت دی جائے گی ۔ پریس کانفرنس کے موقع پر پارٹی کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی ، سنئیر نائب صدر حامد خان، سیکرٹری اطلاعات شفقت محمود، جہانگیر ترین اور دیگر راہنما بھی موجود تھے۔

یہ بھی پڑھیں  پاکستان کی بقا، آزادی کشمیر میں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker