تازہ ترینعلاقائی

وزیراعظم نواز شریف اوراُن کی حکومت مسئلہ کشمیر کو پانچ فروری کی چھٹی تک محدود نہ رکھیں، میاں محمد اسلم

راولپنڈی (ڈپٹی بیورو چیف)اسلام آباد؛نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان و سابق ممبر قومی اسمبلی میاں محمد اسلم نے کہا ہے وزیر اعظم نو از شر یف اور اُن کی حکو مت مسئلہ کشمیر کو پانچ فروری کی چھٹی تک محدود نہ ر کھیں بلکہ اس کو اقوام متحدہ میں اُٹھا ئیں OICکے اجلا س میں پیش کر یں اور دنیا بھر میں سفارتی زرائع کو استعمال کر تے ہو ئے حل کرنے کی کو شش کر یں ۔انھوں نے کہاکشمیر تاریخی ،جغرافیائی اور تہذیبی اعتبار سے پاکستان کا حصہ ہے،کشمیر کے مسئلے پر عالمی برادری نے دوہرے معیارکا ثبوت دیا ہے قوم کشمیریوں کے خون کا سودا کسی بھی صورت برداشت نہیں کرے گی ،خطے میں امن کے قیام کے لیے نا گزیر ہے کہ مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں حل کیا جائے ۔ امریکہ نے جس طرح بھارت کی سر پرستی کی ہے اور جس طرح اس کے ایٹمی پروگرام کی حمایت کی جارہی ہے وہ سراسر پاکستان دشمنی پر مبنی ہے ۔اوبامہ کو اب کشمیر میں بھارت کی دہشت گردی کیوں نظر نہیں آرہی عالمی برادری بھارتی دہشت گردی کے خلاف کاروائی کیوں نہیں کرتی ۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے جماعت اسلامی اسلام آباد کے زیر اہتمام جی نائن مر کز میں عظیم الشان یکجہتی کشمیر ریلی سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ۔اس مو قع پر جماعت اسلامی آزاد کشمیر کے نائب امیر نو الباری،امیر جماعت اسلامی اسلام آباد زبیر فارو ق خان ، جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر کے رہنماء غلام نبی نو شہروی ،مر کزی انجمن تا جران اسلام آباد کے صدر محمد کاشف چو ہدری ،ہماء ایو ب ،شباب ملی کے رہنماء چو ہدری طارق ،جمیل کھو کھر نے بھی خطاب کیا ۔ریلی میں بڑی تعداد میں خو اتین اور بچے بھی مو جو د تھے جنہو ں نے کشمیر سے یکجہتی اور انڈیا کے خلاف درج نعرو ں والے پلے کارڈ اُٹھا رکھے تھے ۔ میاں محمد اسلم نے کہا کشمیر کا مسئلہ انگریزوں کا پیدا کردہ ہے تا کہ پاکستان اور مسلمانوں کو کمزور کیا جائے ۔تقسیم ہند کے فارمولے کے تحت مسلم اقلیتی علاقے پاکستان میں شامل ہوئے تھے مگر اس کے باوجود کشمیر اور گورداس پور کو پاکستان میں شامل ہونے نہیں دیا گیا ۔1947سے کشمیر ی قوم کے لا کھوں نو جو انوں نے لازوال قر بانیوں کے ذر یعے ایک تا ریخ رقم کی ہے اقوام متحدہ نصف صدی سے زائد عرصے سے پر محیط اس قرار داد پر عمل کروائے جو جو اہر لال نہرو خو د اقوام متحدہ کے پاس لے کر گیا اور وعدہ کیا کہ وہ کشمیر یوں کو حق خود اردیت دے گا ۔ ریلی سے خطاب کر تے ہو ئے نور الباری نے کہا کشمیر تحر یک تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں جو دو قومی نظر یے کا نہ مکمل ایجنڈا ہے ۔ کشمیر اور پاکستان ایک ہی ہیں کشمیر تاریخی لحاظ سے کبھی بھارت کا حصہ نہیں رہا بلکہ کشمیری جغر افیائی،تاریخی ،نظریاتی اور دینی اعتبار سے پاکستان کے ساتھ ہیں لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ حکمرانوں کی غلط پالیسیوں کے باعث مسئلہ کشمیر کو قوم کے ذہنوں سے محو کیا جا رہا ہے ۔انھوں نے کہا پاکستانی قوم تو ہمیشہ کشمیریوں کی پشتی بان رہی ہے مگر حکمر انوں نے کر سی کی خا طر مسئلہ کشمیر کو نظر انداز کیا ۔ زبیر فارو ق خان نے کہا کشمیر ی حکمران جو مر ضی کر لیں پاکستان میں ایسے نو جو انوں کی کو ئی کمی نہیں جو کشمیر یوں کی خاطر اپنا خو ن پیش کر نے کے لیے تیار ہیں۔غلام نبی نو شہر وی نے کہا میں پاکستانی قوم کو سلام پیش کر تا ہو ں جنہوں نے ہمیشہ کشمیر یوں کو یا د ر کھاکشمیر ی بھی پاکستان سے والہانہ محبت کر تے ہیں ۔انھوں نے کہا انڈ یا پاکستان سے خو فزادہ ہے کیو نکہ وہ ایک غا صب ملک ہے جو ایک طو یل عر صے سے کشمیر ی قوم پر ظلم ڈھا رہا ہے انشاء اللہ کشمیر یوں کی جدو جہد رنگ لائے گی اور وہ آزاد ہو کر پاکستان کا حصہ بنیں گے۔ کاشف چو ہدری نے کہا بھارت سے تجارت کی بات کر نے کا کو ئی فا ئدہ نہیں ان سے تعلقات بحا ل نہیں ہو سکتے جب تک اس سے قبل کشمیر یوں کو حق خو د اردیت نہیں دیا جا تا ۔انھوں نے کہا اُبامہ بھارت کی حمایت بند کر ے امر یکہ کی جانب سے غا صب بھارت کی حمایت سے دنیا میں تیسری ایٹمی جنگ شرو ع ہو نے کا خطر ہ پیدا ہو گیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں  آزاد کشمیر حکومت کا درآمد شدہ مشیر باتدبیر

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker