پاکستانتازہ ترین

توقیرصادق کو فرار اور تحفظ فراہم کرنے کے الزامات بے بنیاد ہیں،رحمن ملک

rehmanاسلام آباد(بیورو رپورٹ)وفاقی وزیر داخلہ سینٹر رحمن ملک نے کہا ہے کہ سابق چیئرمین اوگرا توقیر صادق کو فرار اور تحفظ فراہم کرنے کے الزامات بے بنیاد ہیں،کامران فیصل کیس میں سپریم کورٹ کا ایکشن لینا خوش آئند ہے،سپریم کورٹ کے ساتھ ملکر اصل حقائق سامنے لائیں گے ،غیر قانونی سمز اب بھی دہشتگردی میں استعمال ہورہی ہیں،فروری تک موبائل کمپنیوں کے آؤٹ لیٹس پر بائیو میٹرک سسٹم نصب کردیں گے، موبائل سم خریداروں کے انگوٹھے کے نشانات لئے جائیں گے،اسلحہ لائسنس کے لئے ہر شخص کی تصدیق اور جانچ پڑتال ضروری ہو گی، اسلحہ لائسنس کی مدت بڑھا کر ایک سال کی بجائے پانچ سال کرنے کے احکامات بھی جاری کر دیئے ہیں،عید میلاد النبی ؐکے موقع پر ملک کے کئی شہروں میں موبائل فون بند کردی جائے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز نادرا ہیڈ کوارٹر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر چیئرمین نادر طارق ملک اور سیکرٹری داخلہ خواجہ صدیق اکبر بھی ان کے ہمراہ تھے۔نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا )کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ نادرا نے اس وقت بہت اچھا کام کر رہا ہے اس سے جہاں ایک طرف تمام افراد کی رجسٹریشن ہو رہی ہے تو دوسری جانب ملکی معیشت بہتر ہور ہی ۔ملک میں اس وقت چار لاکھ 83ہزار سے زائد سمارٹ کارڈز جاری ہو چکے ہیں جو کہ ملٹی یوز ہیں نادرانے سمارٹ کارڈ میں انشورنس ،پنشن اور دیگر سہولیات فراہم کی ہیں۔جبکہ مجموعی طور پر 9کروڑ 36لاکھ سے زائد شناختی کارڈز جاری کیے جا چکے ہیں۔بائیو میٹرک سسٹم لگانے کے لئے ٹیلکو کو کہہ دیا جو ملک کے مختلف خصوں میں اپنا سسٹم ایک ہفتے کے اندر اندر لگا دیں گی۔انٹرنیشنل رومنگ والی سموں کے ذریعے بھی غیر قانونی کام کیے جا سکتے ہیں اس لئے بیرون ملک کی ٹیلکو کمپنیو ں کو بھی اس حوالے سے لکھ دیا ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ نادر کو ایک ذمہ داری یہ بھی دی گئی ہے کہ ووٹر لسٹیں بنانے کے ساتھ ساتھ ووٹ کاسٹ کرنے والے افراد کو بھی مانیٹر کریں کیونکہ پاکستان میں 60فیصد لوگ ووٹ ڈالتے ہی نہیں اس لئے ان کے خلاف بھی کاروائی ہونی چاہیے اور اس حوالے نادرا کو ہدایات دی ہیں کہ وہ الیکشن کمیشن کے ساتھ ملکر اس حوالے سے سفارشات مرتب کریں اور اگر الیکشن کمیشن نے کہا تو اس کے لئے پارلیمنٹ سے قانون سازی کروانے کے لئے بل پیش کیا جائے گا تاکہ ایسے افراد کے خلاف کا بھی احتساب ہو سکے جو باقی تمام سہولیات سے تو فائدہ اٹھا رہے ہیں مگر ووٹ نہیں دیتے ۔رحمن ملک کا کہنا تھا کہ اس کے لئے آسٹریلیا کے ماڈل کو لانے کے لئے بھی نادر کو ہدایات دی ہیں تاکہ آسٹریلیا کی طرح انتخابات کا طریقہ کار طے کر کے انتخابات کو صاف اور شفاف بنایا جا سکے۔انہوں نے مزید کہا کہ اسلحہ لائسنس کے حوالے سے اگر قانون کے اجازت ہے تو اس کو روکیں گے نہیں تاہم اس کے لئے مکمل جانچ پڑتال کی جائے گی اور عوام کی سہولت کے پیش نظر اسلحہ لائسنس کی مدت اسی فیس میں بڑھا کر ایک سال کی بجائے پانچ سال کر دی گئی ہے۔اسلحہ لائسنس جاری کرنے سے قبل ہر شخص کے شناختی کارڈ کی بھی پوری طرح تصدیق اور جانچ پڑتال کی جائے گی۔رحمن ملک نے توقیر صادق کے حوالے سے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ان کو نشانہ بنانا اور دباؤ میں لانے کی کوشش کی جا رہی ہیں مگر وہ دباؤ میں نہیں آئیں گے۔انہوں نے واضح کیا کہ توقیر صادق کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا تھا اور ایف آئی اے کے مطابق وہ ملک سے غیر قانونی طریقے سے فرار ہوا ہے کیونکہ ملک کے کسی ایئر پورٹ سے وہ فرار نہیں ہوا۔ایک سوال کے جواب میں ان کاکہنا تھاکہ توقیر صادق کوگرفتار کر کے لائیں گے اس لئے اس سے کہہ دیا ہے کہ وہ خود کو قانون کے حوالے کر دے ورنہ دنیا کے کسی بھی ملک میں جا کر وہ محفوظ نہیں رہ سکتا۔اگر کوئی غیر قانونی طریقے سے ملک سے فرار ہوتا ہے تو اس کی ذمہ داری رحمن ملک پر نہیں ڈالی جا سکتی ۔ان کا کہنا تھا کہ توقیر صادق کے حوالے نہ کبھی جہانگیر بدر سے بات ہوئی اور نہ کبھی انہوں نے کوئی سفارش کی اور نہ ہی کوئی دباؤ ڈالا بلکہ اس قسم کے تمام الزامات بے بنیاد ہیں کیونکہ توقیر صادق کے فرار ہونے کے حوالے خود دوسرے دن اخبارات پڑھ کر پتہ چلا۔کامران فیصل کی ہلاکت کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ کامران فیصل کی ہلاکت کی خبر سن کر فوری طور پر آئی جی اسلام آباد کو ہدایات جاری کیں کہ پوسٹمارٹم رپورٹ ماہر ڈاکٹرز سے کروایا جائے اور پولی کلینک کے چھ ماہر ڈاکٹر ز سے پوسٹمارٹم کروانے کے باوجود بھی کہا کہ اگر اس کے والدین سے جہاں پوسٹمارٹم کروانا چاہیں تو یہ ان کی مرضی پر ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں خودکشی کا واقعہ قرار دینے کے باعث اس کی ایف آئی آر درج نہیں کی گئی۔حکومت کی جانب سے مجسٹریل انکوائری کمیٹی بنائی گئی جس نے واقعہ کو خودکشی قرار دیا اور اس کے بعد کمیشن وفاقی حکومت کی طرف سے بنایا گیا جس کا نوٹیفیکشن 20جنوری کو جاری کیا گیا اس کے باوجود اگر سپریم کورٹ نے معاملے کانوٹس لیا ہے تو اس کے شکر گزار ہیں تاکہ سب ملکر اصل حقائق سامنے لیکر آئیں اور بے یقینی کی صورتحال کا خاتمہ ہو سکے ۔ رحمان ملک کا کہنا ہے کہ پنجاب، سندھ اور بلوچستان حکومت نے عید میلاد النبی ؐکے موقع پر سیکورٹی خدشات کے باعث کئی شہروں میں صبح 7 سے رات 10 بجے تک موبائل سروس بند رکھنے کی درخواست کی ہے، سندھ کے شہروں کراچی، حیدرآباد اور خیرپور جبکہ پنجاب میں لاہور، راولپنڈی، اٹک، شیخو پورہ، ننکانہ صاحب، سیالکوٹ، جہلم، چکوال، فیصل آباد، گوجرانوالہ، بھکر، جھنگ، چنیوٹ، لودھراں، ساہیوال ، راجن پور، مظفر گڑھ، نارووال اور سرگودھا میں موبائل بندکرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بلوچستان حکومت نے صرف کوئٹہ میں موبائل فون بند کرنے کی درخواست کی ہے۔ وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ فروری تک موبائل کمپنیوں کے آؤٹ لیٹس پر بائیو میٹرک سسٹم نصب کردیں گے، موبائل سم خریداروں کے انگوٹھے کے نشانات لئے جائیں گے، غیر قانونی سمز اب بھی دہشتگردی میں استعمال ہورہی ہیں۔ نہوں نے کہا کہ جو عام انتخابات میں ووٹ نہیں ڈالے گا اس پر جرمانے کی تجویز زیر غور ہے، ووٹ نہ ڈالنے والوں کو گیس، بجلی اور دیگر سہولتوں سے محروم کیا جاسکتا ہے، نادرا ایسا سافٹ ویئر تیار کرے جس سے پتا چلے کس نے ووٹ نہیں ڈال۔

یہ بھی پڑھیں  دیپالپور:یونین کونسل 129میں جیت پی ٹی آئی کا مقدر ہے ،رانا اقبال

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker