پاکستانتازہ ترین

بے نظیر بھٹو کی سیکیورٹی سے میرا کوئی تعلق نہیں تھا

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)  وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک نے بے نظیر قتل کیس میں نئے انکشافات کئے ہیں۔ رحمان ملک نے دعویٰ کیا ہے کہ بے نظیر بھٹو کی سیکیورٹی سے ان کا کوئی تعلق نہیں تھا۔  رحمان ملک نے بیان میں انکشاف کیا ہے کہ بے نظیر بھٹو کے حفاظتی سکواڈ میں کوئی بیک اپ گاڑی شامل نہیں تھی انھیں جائے حادثہ سے لے جانے والا ڈرائیور زرداری ہاؤس کا تھا جو ان کے کنٹرول میں نہیں تھا اور نہ وہ اسے کوئی ہدایت دے سکتے تھے۔ گاڑی میں بابراعوان، جنرل توقیر اور فرحت اللہ بابر بھی تھے۔ رحمان ملک نے مزید انکشاف کیا ہے ان کی اور بے نظیر بھٹو کی مشترکہ کمپنی تھی جو ان کی زندگی میں ہی ختم کر دی گئی تھی ان کے اور محترمہ کے ایک بین الاقوامی بینک میں جوائنٹ اکاؤنٹ بھی تھے جو بند کر دیئے گئے تھے۔ رحمان ملک کا کہنا ہے کہ انھیں بے نظیر بھٹو کی موت سے کوئی مالی فائدہ نہیں ہوا۔ انھوں مزید کہا ہے کہ ان کا بے نظیر بھٹو کی سیکیورٹی سے کوئی تعلق نہیں تھا۔ سابق سیکرٹری داخلہ کمال شاہ کو چھبیس خط لکھے جن میں بے نظیر بھٹو کیلئے سیکیورٹی کے ناقص انتظامات کا ذکر تھا لیکن کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ رحمان ملک کا کہنا تھا کہ بے نظیر بھٹو کا سابق پروٹوکول افسر چودھری اسلم دہشتگردوں کی مدد کرنا چاہتے ہیں اور بے نظیر بھٹو کے قاتلوں کے خلاف مقدمہ رکوانا چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  مریم نواز سن لیں ملک میں بادشاہت نہیں جمہوریت ہے، عمران خان

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker