پاکستانتازہ ترین

عیسائیوں کا رحمن ملک سے معافی کا مطالبہ

rehmanلاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان کے وزیر داخلہ رحمن ملک کی جانب سے تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری کو پاپ کہنے پر عیسائی برادری میں شدید غم وغصہ پایا جارہا ہے۔ عیسائی رہنماؤں نے اس بیان پر رحمن ملک سے معافی کا مطالبہ کیا ہے۔ یادرہےکہ 14 جنوری کو میڈیا سے بات چیت کرتےہوئے رحمن ملک نے کہا تھا کہ طاہرالقادری اپنی عادتوں سے عیسائیوں کے پاپ جب کہ اپنے حلیئے سے یہودیوں کے  پاسٹر لگتے ہیں۔ نیشنل کمیشن فار جسٹس اینڈ پیس کے ڈائریکٹر اور کیتھولک عیسائیوں کے پادری امانؤل یوسف مانی نے مطالبہ کیا کہ طاہرالقادری اور پاپ بینیڈکٹ کا موازنہ کرنے پر رحمن ملک عیسائی برادری سے معافی مانگیں اور اپنے الفاظ فوری واپسی لیں۔انہوں نے کہاکہ پاپ بینیڈکٹ ایک غیر سیاسی اور غیر متنازعہ شخصیت ہیں ان کے خلاف آئندہ ایسی زبان استعمال کرنے سے پرہیز کیا جائے۔ ہیومن لبریشن کمیشن کرسچن کے سرابراہ اسلم پرویز کا کہنا ہےکہ رحمن ملک نے اپنے اس بیان سے نہ صرف طاہر القادری پر طنز کیا ہے بلکہ عیسائی برادری کی بھی توہین کی ہے، رحمن ملک اس بیان پرمعافی مانگیں۔ رحمن ملک کے اس بیان پر اس سے قبل طاہرالقادری بھی ان سے معافی کا مطالبہ کرچکےہیں۔

یہ بھی پڑھیں  حکومت کا مستقبل تاریک نظر آرہا ہے، چوہدری شجاعت حسین

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker